سات سالہ بچی کیساتھ زیادتی کا ایک اور واقعہ سامنے آ گیا

سات سالہ بچی کیساتھ زیادتی کا ایک اور واقعہ سامنے آ گیا

( سعید احمد ) نصیرآباد کے رکشہ ڈرائیور عاطف کی بیٹی نور کیساتھ زیادتی ، ایف آئی آر کو گیارہ روز گزرنے کے باجود پولیس ملزم پکڑنے میں ناکام ہے۔

صوبائی دارالحکومت میں سات سالہ معصوم بچی کیساتھ زیادتی کا واقعہ سامنے آگیا، عاطف حسین کا کہنا ہے 9 اکتوبر کو بیٹی شام 4 بچے گھر سے ہمسائےکی لڑکی ماریہ کیساتھ کھیلنے گئی، گھر واپس آئی تو تکلیف میں تھی۔ ڈاکٹرکو چیک کروایا تو اس نے بچی کیساتھ زیادتی کا بتایا۔

واقعے کی تھانہ نصیرآباد میں ایف آئی آر درج کروائی، ایف آئی آر کو گیارہ دن سے زائد گزرنے کے باوجودپولیس کی طرف سے کوئی مدد فراہم نہیں کی جا رہی۔

بچی کے ورثاء کو انصاف نہ ملنے پر نائب امیر جماعت اسلامی لیاقت بلوچ کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اس معاملے پر خاموش رہنے کی بجائے ورثاء کو انصاف دلانے کیلئے ہر فورم پر آواز بلند کریں گے، متعلقہ تھانے اور تحقیقاتی پولیس ٹیم کو 3 دن کی مہلت دیتے ہیں کہ وہ تمام معاملے کو سامنے لائیں۔

اہل محلہ نے بھی پولیس کےعدم تعاون پر احتجاج کیا، مظاہرین ’’ نور کو، انصاف دو‘‘کے نعرے لگاتے رہے۔