دوران پریس کانفرنس صحافی کے سوال پر عمران خان بھڑک اٹھے

دوران پریس کانفرنس صحافی کے سوال پر عمران خان بھڑک اٹھے
سورس: Google
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

مانیٹرنگ ڈیسک: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان دوران پریس کانفرنس صحافی کی جانب سے کئے جانے والے سوال پر بھڑک اٹھے۔ 

تفصیلات کے مطابق آج پریس کانفرنس کے دوران صحافی نے سوال کیا کہ آپ کے بڑی تعداد میں کارکن ہیں جو آپ کی بات پسند کرتے ہیں لیکن آپ چور ،ڈاکو اور امپورٹڈ حکومت کے ساتھ اسلام آباد گئے اور واپس آ گئے تاہم اب کس نئے نعرے کے ساتھ اسلام آباد پر چڑھائی کریں گے؟، آپ ،،کی بورڈ وارئیر اور یو ٹیوبرز،، کے ساتھ اسلام آباد کیسے فتح کریں گے؟، اب لوگ اہم شخصیات کو گالیاں دے رہے ہیں اور یہ تربیت کس نے کی؟ آپ چوروں کے خلاف تحریک چلائیں اور واپس حکومت میں آ کر معاملات سنبھالیں لیکن اپنے کارکنوں کی تربیت کر لیں اور ان کے لیے کیا پیغام ہے؟

صحافی کے اس لمبے چوڑے سوال پر نا گواری کا اظہار کرتے ہوئے کپتان نے کہا کہ میں اس سوال کا سخت جواب دے سکتا ہوں لیکن نہیں دوںگا۔ہم صرف الیکشن کے اعلان کا مطالبہ کر رہے ہیں اور قوم جس کو چاہے ووٹ دے لیکن ہم امپورٹڈ حکومت نہیں چاہتے ۔ صحافی کے سوال پر انہوں نے مزید کہا کہ یہ کی بورڈ وارئیر کی سمجھ نہیں آئی، سوشل میڈ یا کو کوئی کنٹرول نہیں کر سکتا سوشل میڈ یا نے لوگوں کو آواز دی جس کے پاس فون ہے اس کے پاس آواز ہے ۔ عمران خان نے کہا کہ یہ کہنا غلط ہے کہ میں نفرت پھیلا رہا ہوں ، اگر میں نفرت پھیلانا چاہتا تو اسلام آباد میں ماحول کچھ اور ہوتا لیکن میں قوم کو اکٹھا کرنا چاہتا ہوں اور آپ کا سوال غلط ہے ، آپ نے پریس کانفرنس میں آ کر غلط قسم کی تقریر کی ہے۔