پیراگون ہاؤسنگ سکینڈل، خواجہ برادران کی نیب میں پیشی

پیراگون ہاؤسنگ سکینڈل، خواجہ برادران کی نیب میں پیشی

ملک اشرف: مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور سابق وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق اور ان کے بھائی خواجہ سلمان رفیق نیب آفس میں پیش ہوئے اور بیان قلمبند کرانے کے بعد واپس روانہ ہوگئے۔

نیب لاہور نے ہاؤسنگ کرپشن اسکینڈل میں دونوں بھائیوں کو طلب کیا تھا اور آج دونوں نیب لاہور کے دفتر میں پیش ہوئے۔ نیب کی 3 رکنی تحقیقاتی ٹیم نے خواجہ سعد رفیق اور سلمان رفیق سے الگ الگ تحقیقات کی اور دونوں بھائی ایک گھنٹے تک نیب دفتر میں رہے۔

 ذرائع کے مطابق خواجہ برادران پر پیراگون سٹی میں حصہ دار ہونے کا الزام ہے جبکہ ان پر پیراگون سٹی کے ذریعے آشیانہ اقبال سے فوائد لینے کا بھی الزام ہے۔

یاد رہے کہ نیب کی تین رکنی تحقیقاتی ٹیم پیراگون ہاؤسنگ سوسائٹی میں مبینہ طور پر کی جانے والی کرپشن کی تحقیقات کر رہی ہے۔ اس سے قبل نیب نے مسلم لیگ (ن) کے صدر اور سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کو صاف پانی اسکینڈل کی تحقیقات کے لیے طلب کیا تھا اور انہیں آشیانہ اقبال ہاؤسنگ اسکیم اسکینڈل میں دفتر سے ہی گرفتار کرلیا گیا تھا۔

   خواجہ سعد رفیق اور خواجہ سلمان رفیق اس سے قبل بھی 3 مرتبہ نیب کو اپنا بیان ریکارڈ کروا چکے ہیں اور ان کی جانب سے نیب سوال نامے کا جواب بھی جمع کرایا جا چکا ہے۔