معروف شخصیت سی ای او رحیم سٹوررانا اخترمحمودانتقال کرگئے

(عمر اسلم)مسلم لیگ ن کے رہنما اور سی ای او رحیم سٹور رانا اختر محمود ہفتہ کے روز کرونا وائرس کی وجہ سے انتقال کر گئے، رانا اختر محمود کرونا وائرس کی وجہ سے تقریبا ایک ہفتہ سے اتفاق ہسپتال میں زیر علاج تھے ۔

تفصیلات کے مطابق کورونا کی تباہ کاریاں جاری ہیں، قیمتی انسانی جانیں بے رحم وائرس نگل رہا ہے،سیاسی و سماجی شخصیت،سی ای او رحیم سٹور رانا اخترمحمود کا کورونا کی وجہ سے انتقال ہوگیا،رانا اخترمحمود چند روز سے کوروناکے باعث ہسپتال میں زیر علاج تھے،رانا اخترمحمود کی نماز جنازہ کل بعد ازنمازظہر ادا کی جائے گی،نمازجنازہ 86 کالج بلاک مین گراؤنڈ سائنس کالج اقبال ٹاؤن میں ادا کی جائے گی۔

واضح رہے کہ  نوجوان شاعرہ، ادیب صحافی کرن وقار کورونا وائرس کے باعث انتقال کر گئیں تھیں، پچھلے ماہ کرن وقار کی والدہ اور بھائی بھی کورونا کے باعث انتقال کرگئے تھے۔نوجوان شاعرہ ادیب اور مختلف اخبارات میں ادبی صفحات کی لکھاری کرن وقار جو چند روز سے بحریہ ٹاون ہسپتال میں زیر علاج تھیں۔

کورونا وائرس کے باعث انتقال کر گئیں ہیں۔کرن وقار کی عمر چونتیس سال تھی اور وہ ایک شیر خوار بیٹی کی ماں بھی تھیں۔کرن وقار کی والدہ اور بھائی بھی کورونا کی وجہ سے پچھلے ماہ ہی انتقال کر گئے تھے اور ان کے انتقال کے بعد کرن وقار کو کورونا وائرس لاحق ہوا۔شاعرہ چند روز سے بحریہ ٹاؤن ہسپتال میں زیر علاج تھیں جہاں وہ اپنے خالق حقیقی سے جا ملیں۔ کرن وقار کی میت تدفین کے لئے ان کے آبائی شہر اوکاڑہ روانہ کردی گئی ہے۔  

قبل ازیں لاہور کالج فار ویمن یونیورسٹی کی سابق وائس چانسلر کئی مہینوں سے علیل تھیں اور رات گئے طبعیت اچانک خراب ہونے پر وہ دنیا سے رخصت ہو گئیں تھیں۔ ڈاکٹر بشریٰ متین لاہور کالج میں آٹھ سال تک وائس چانسلر کے عہدے پر تعینات رہیں جبکہ وہ بطور پرنسپل بھی کام کرتی رہی ہیں۔

ان کی نماز جنازہ جامع مسجد ایچ بلاک ڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹی میں ادا کی گئی۔ وائس چانسلر لاہور کالج فار ویمن یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر بشریٰ مرزا نے ڈاکٹر بشریٰ متین کی وفات پر دکھ اور صدمے کا اظہار کیا ہے۔