جنوبی پنجاب کے نوجوانوں کے لیے ملازمتوں کے نئے مواقع

usman buzdar CM Punjab
کیپشن: usman buzdar CM Punjab
سورس: city42
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

 زاہد چودھری : جنوبی پنجاب کے بیروزگار نوجوانوں کے لئے بڑا فیصلہ ملازمتوں میں 32 فیصد کوٹہ مقرر کردیا گیا ۔ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارکی زیر صدارت صوبائی کابینہ کا51واں اجلاس، 4گھنٹے جاری رہنے والے طویل اجلاس میں اہم فیصلوں کی منظوری دی گئی۔

 وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارکی زیر صدارت صوبائی کابینہ کا51واں اجلاس میں جنوبی پنجاب کے لئے ملازمتوں میں کوٹہ مختص کرنے کا تاریخ ساز فیصلہ کیا گیا،کابینہ نے اتفاق رائے سے جنوبی پنجاب کے لئے ملازمتوں میں 32فیصدکوٹہ مختص کرنے کی منظوری دی گئی جبکہ کابینہ نے پنجاب سول سرونٹس ایکٹ1974میں ترمیم کی منظوری بھی دی۔

 پنجاب کے دیگر پسماندہ اضلاع کے لئے ملازمتوں میں کوٹہ مختص کرنے کے لئے کمیٹی کو سفارشات پیش کرنے کی ہدایت اورسلم فیملی لاز آرڈیننس1961کے تحت ویسٹ پاکستان رولز میں ترمیم کی منظوری دی گئی۔نکاح نامے میں ختم نبوتؐ کے حلف نامے میں شق شامل کرنے پر اتفاق ہوا،نکاح کے وقت دولہا دولہن کو ختم نبوتؐ پر ایمان کا حلف دینا ہوگا۔

سی پیک کے تحت کارپوریٹ فارمنگ کے لئے سرکاری اراضی لیز پر دینے کی اصولی منظوری، کارپوریٹ فارمنگ کے لئے لیز کے قواعد و ضوابط طے کرنے کے لئےوزارتی کمیٹی قائم کرنے کی ہدایت کی گئی۔پنجاب بھر میں 500سے5ہزار ایکڑ اراضی کارپوریٹ فارمنگ کے لئے استعمال ہوسکے گی۔کارپوریٹ فارمنگ کے فروغ سے روزگار،فوڈ سکیورٹی اورجدیدزراعت کو فروغ ملے گا۔

پنجاب میں کچی آبادیوں کومالکانہ حقوق دینے کی پالیسی کو آئندہ کابینہ اجلاس میں پیش کرنے کی ہدایت کی گئی۔پنجاب سہولت بازار اتھارٹی ایکٹ2021کی منظوری کے علاوہ پنجاب بھر میں مستقل بنیادوں سہولت بازار قائم کیے جائیں گے۔سہولت بازاروں میں عوام کو سستے داموں اشیاء ضروریہ فراہم کی جائیں گی۔اتھارٹی کے چیئرمین وزیراعلیٰ اور وائس چیئرمین صوبائی وزیر صنعت ہوں گے۔اتھارٹی تحصیل کی سطح تک سہولت بازاروں کا دائرہ کار بڑھائے گی۔

یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز لاہورکے وائس چانسلر کی تعیناتی کے لئے سرچ کمیٹی اوراہلیت کا معیارطے کرنے کامعاملہ محکمہ قانون کے سپرد ہوگا۔کابینہ نے پنجاب ریگولرائزیشن آف سروس ایکٹ2018میں ترمیم کی منظوری بھی دی،بعض محکموں کے کنٹریکٹ ملازمین کو مستقل کرنے کیلئے قواعد وضوابط میں ترمیم کو بھی منظور کیا گیا جبکہ عدالتی احکامات کی روشنی میں آوارہ کتوں کے لئےبرتھ کنٹرول پالیسی کی منظوری دی۔

پنجاب روڈ سیفٹی اتھارٹی ایکٹ 2020، پنجاب ڈرگز رولز2007میں ترامیم،رواں مالی سال-22 2021کے دو ران کماڈیٹی آپریشن کو فنانشل کور فراہم کرنے کیلئے ٹیکنیکل ضمنی گرانٹ اور رواں مالی سال 2021-22کے دوران امپورٹڈشوگر پر مارک اپ اور سبسڈی کی ادائیگی کیلئے ضمنی گرانٹ کی منظوری دے گئی۔

ٹیکنیکل اورووکیشنل اداروں کو ایک ہی پلیٹ فارم کے تحت کرنے کا اصولی فیصلہ کیا گیا۔ڈسٹرکٹ کنزیومرپروٹیکشن کونسل کی تشکیل نو کی منظوری

پنجاب پرائیویٹ سکولز ریگولیٹری اتھارٹی کے قیام کی منظوری،اتھارٹی پرائیویٹ سکولوں کوریگولیٹ کرے گی،پرائیویٹ سکولوں کے طلبہ،والدین،اساتذہ شکایات کے ازالے کیلئے رجوع کرسکیں گے۔پنجاب ایگزامینشن بزنس رولز 2021کی منظوری کے علاوہ سکینڈری ایجوکیشن میں وسیلہ تعلیم پروگرام کا دائرہ کار وسیع کرنے کی منظوری دے دی گئی۔

پنجاب کابینہ نے رواں مالی سال2021-22کیلئے صوبے میں کفایت شعاری کے اقدامات کی منظوری دے دی۔ایڈیشنل چیف سیکرٹری کی سربراہی میں قائم کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں مختلف پوسٹوں کو اپ گریڈ کرنے کی منظوری،تمام محکموں کے ٹیلی فون آپریٹرز کی آسامیوں کواپ گریڈ کرنے کی منظوری بھی دی گئی۔

محکمہ جیل خانہ جات اوردیگر محکموں کی جا نب سے اپ گریڈیشن کی سفارشات منظور اور دیگر محکموں کی جانب سے اپ گریڈیشن کی سفارشات کو جلد کابینہ اجلاس میں پیش کرنے کی ہدایت کی گئی۔ایس ایچ اوز کو ڈرائنگ اینڈڈسپرسنگ آفیسر کے مالی اختیارات دینے،پولیس میں اکاؤنٹس (سینئر کلرک بی ایس14)کی 720آسامیوں کی منظوری اور ان کلاسیفائڈ فاریسٹ کو پروٹیکڈفاریسٹ قرار دینے کا فیصلہ کیا گیا۔

نمل جھیل کو تحفظ کیلئے وٹ لینڈ(Wetland)قرار دینے کی منظوری،پنجاب وائلڈ لائف پروٹیکشن،پریزویشن،کنزویشن اینڈ مینجمنٹ ترمیمی ایکٹ 2007کے تحت نایاب نسل کے پرندوں کو فرسٹ شیڈول سے تھرڈ شیڈول اورفورتھ شیڈول سے تھرڈ شیڈول میں منتقل کرنے کی منظوری اور جوڈیشنل کمپلیکس مری کی توسیع کے لئے اراضی منتقل کرنے کامعاملہ وزارتی کمیٹی کے سپرد کیا گیا۔

ٹلہ ریزروفاریسٹ کو ٹلہ جوگیاں کو نیشنل پارک قراردینے کی منظوری،سالٹ رینج نیچر ریزرو کمپلیکس کے قیام،کوٹ ادوو کے موضع گجرات میں ماڈل پولیس سٹیشن،اراضی سینٹراور ریسکیو 1122سٹیشن کے قیام کیلئے 4کنال اراضی کی منتقلی،ضابطہ فوجداری سیکشن 196کے تحت ڈپٹی کمشنر کو اختیارات تفویض کرنے،پی ایس ڈی پی اوراے ڈی پی کے تحت نیشنل پروگرام برائے امپروومنٹ آف واٹر کورسز ان پاکستان (پنجاب کمپوننٹ)فیز ٹوکیلئے سٹاف کی تعیناتی کی اصولی منظوری دے گئی۔

پنجاب میں ٹڈی دل کے خلاف آپریشن کیلئے خرید کردہ پیسٹی سائیڈ کو فوری نیلام کرنے کی اجازت اور پنجاب لگژری ہاؤس ٹیکس رولز 2014میں ترمیم کی منظوری اور محکمہ ہائر ایجوکیشن کی ایکریڈیشن کمیٹی کے قیام،پنجاب فنانس ایکٹ 2021کی ذیلی شق 3میں ترمیم،پنجاب میں الیکٹرک گاڑیوں کے ٹوکن ٹیکس پر 95فیصد استثنیٰ دینے،پنجاب سمال انڈسٹریزکارپوریشن ایکٹ1973 ذیلی شق 31کے تحت گارنٹی اور قرضہ جات کی مقررہ حد کوبڑھانے کی اصولی منظوری دی گئی۔

محکمہ خزانہ کو گاڑنٹی اورقرضہ جات کی حد بڑھانے کی سفارشات پیش کرنے کی ہدایت کی گئی۔متحدہ علماء بورڈکو ریگولیٹ کرنے کے لئے بل پیش کرنے کا اصولی فیصلہ کیا گیا۔پنجاب کریکولم اینڈ ٹیکس بک بورڈ لاہورکی سالانہ رپورٹ برائے مالی سال 2019-20کی منظوری دی گئی۔آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی آڈٹ رپورٹس برائے سال 2017-18،2018-19اور2019-20کی منظوری دی گئی۔

اجلاس میں پنجاب حکومت کی مالیاتی رپورٹ برائے سال 2018-19کی منظوری دی گئی۔پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کے آٹو میشن فیئر کولیکشن اوربس شیڈول سسٹم کے بارے میں انفارمیشن سسٹم آڈٹ رپورٹ برائے سال2019-20کی منظوری کے علاوہ پنجاب حکومت کی جانب سے مالی سال 2019-20میں کورونا کے حوالے سے ہونے والے اخراجات کی خصوصی آڈٹ رپورٹ کی منظوری بھی دی گئی۔

پنجاب کمیشن آن دی سٹیٹس آف وویمن کی سالانہ رپورٹس برائے سال2019اور2020،پنجاب بیت المال کونسل کی سالانہ رپورٹ برائے سال 2019،پنجاب جوڈیشل اکیڈمی کی سالانہ آڈٹ اینڈ پرفارمنس رپورٹ برائے سال2016-17 او ر2017-18،پنجاب حکومت کے اکاؤنٹس کی اپروپیشن برائے مالی سال 2017-18کی منظوری اور پنجاب کابینہ کے 49ویں اور50ویں اجلاس کے فیصلوں کی توثیق کی گئی۔

اجلاس میں کابینہ سٹیڈنگ کمیٹی برائے فنانس اینڈ ڈویلپمنٹ کے 64ویں،65ویں، 66ویں، 67ویں اور 68ویں اجلاسوں کے فیصلوں، قانونی امور کے 75ویں،76ویں،77ویں،78ویں اور79ویں اجلاسوں کے فیصلوں کی توثیق کی گئی۔صوبائی وزراء،مشیران،معاونین خصوصی،چیف سیکرٹری اورمتعلقہ حکام کی اجلاس میں شرکت کی۔