محکمہ ماحولیات کا دھواں چھوڑتی گاڑیوں کو فوری بند کرنے کا حکم ، نوٹیفیکیشن جاری 

محکمہ ماحولیات کا دھواں چھوڑتی گاڑیوں کو فوری بند کرنے کا حکم ، نوٹیفیکیشن جاری 

قیصر کھوکھر: سموگ کی روک تھام کے  لئے محکمہ ماحولیات نے دھواں چھوڑتی گاڑیوں کو فوری بند کرنے کا حکم دے دیا ہے اور نوٹیفیکیشن  بھی جاری کر دیا۔

 

 تفصیلات کے مطابق سموگ کی روک تھام کے  لئے محکمہ ماحولیات نے دھواں چھوڑتی گاڑیوں کو فوری بند کرنے کا حکم دے دیا ہے اور نوٹیفیکیشن  بھی جاری کر دیا گیا ہے،  محکمہ ماحولیات نے مڈ جلانے پر بھی پابندی عائد کر دی ہے اور مڈ جلانے والوں کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کا حکم دیا ہے اور  اس حکم پر سختی سے عمل کرنے کی ہدایت بھی کی ہے۔

واضح رہے کہ  آلودگی شرح میں اضافہ سموگ دن بہ دن بڑھنے کا موجب بن رہا ہے۔ ائیر کوالٹی انڈیکس کے مطابق ہوا میں آلودگی کی شرح 80 مائیکرو گرام فی کیوبک سینٹی میٹر تک ہونی چاہیے۔جبکہ سندر انڈسٹریل اسٹیٹ میں آلودگی کی شرح 313 فی کیوبک مائیکرو گرام فی کیوبک سینٹی میٹر،عسکری 10 میں 287,اپر مال روڈ217 ،گلبرگ میں 200 تک پہنچ گئی۔اس لئے ماہرین کی جانب سے شہریوں کو حفاظتی تدابیر اختیار کرنے ہدایت کی گئی ہے۔

  دوسری جانب سموگ کا باعث بننے والی چھوٹی بڑی صنعتوں اور ٹرانسپورٹ سے متعلق فہرستیں طلب کی گئیں ہیں،  ی ڈی ایم اے نے محکمہ صنعت و تجارت سے چھوٹی بڑی صنعتوں اور محکمہ ٹرانسپورٹ سے پندرہ سال پرانی اور دھواں چھوڑنے والی کمرشل اور پبلک ٹرانسپورٹ کی تفصیلات طلب کرلیں۔

 محکمہ صنعت و تجارت آلودگی پھیلانے والی صنعتوں کو تین کیٹیگریز پر مشتمل فہرست فراہم کرے سموگ کا باعث بننے والی صنعتوں کے لیے اے، بی اور سی کیٹیگریز تشکیل دی جائیں، پی ڈی ایم اے کی جانب سے خدشات کا اظہار کیا گیا کہ ائیر انڈیکس میں مسلسل اضافہ صنعتی سموگ کے باعٹ ہورہا ہے جبکہ صنعتوں کے ساتھ ساتھ سموگ کی دوسری ٹرانسپورٹ ہے۔

  یاد رہے کہ  پنجاب حکومت نے سموگ کو قدرتی آفت قرار دے دیا، سموگ کو قدرتی آفت قرار دینےکے لیے پی ڈی ایم اے کی وزیر اعلیٰ کو ارسال کی سمری منظوری کرلی گئی، پنجاب قدرتی آفت ایکٹ 1958 کے سیکشن 3 کے تحت سموگ کو قدرتی آفت قرار دیا گیا۔