سانحہ حفیظ سنٹر،حکومت کا متاثرین کیلئے بڑا ریلیف پیکج

سانحہ حفیظ سنٹر،حکومت کا متاثرین کیلئے بڑا ریلیف پیکج

(راؤ دلشاد) سانحہ حفیظ سینٹر کے متاثرین کی داد رسی کے لیے پنجاب حکومت نے حفیظ سینٹر متاثرین بحالی پروگرام کے تحت ریلیف پیکج تیار کرلیا، جھلس والی دکانوں کے مالکان کو آسان شرائط پر قرض ملے گا، پنجاب حکومت نے متاثرین کو بینک آف پنجاب سے 2 ارب تک کے آسان شرائط قرضے دلانے کا ورکنگ پیپر تیار کرلیا۔

سانحہ حفیظ سینٹر پر متاثرین داد رسی کےمعاملہ پر پنجاب حکومت نے حفیظ سینٹر کے متاثرین کی امداد کے لیے ریلیف پیکج کا پلان تیار کرلیا۔ زرائع کے مطابق وزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلیٰ پنجاب کی منظوری اور اعلان کے بعد عمل درآمد ہوگا۔ حفیظ سینٹر متاثرین بحالی پروگرام کے تحت نقصان کے ازالے کا تخمینہ 2 ارب تک لگایا گیا ہے۔ پنجاب حکومت متاثرین کو بینک آف پنجاب سے فنانسنگ کرانے کی سہولت فراہم کرے، دکان کے بدلے دکان بھی دی جاسکتی ہے۔

متاثرین کو وزیر اعلیٰ پنجاب روز گار اسکیم کے تحت 4سے 5 فیصد مارک اپ پر سافٹ لون دیاجائے گا، سوفٹ لون کا 8 فیصد حکومت پنجاب سبسڈی کے طور پر برداشت کرے گی۔ زرائع نے کنفرم کیاکہ حفیظ سینٹر سے ملحقہ آئی ٹی ٹاور کی 135 دکانوں کی نشاندہی کرکے متاثرین کو آفر کردی گئی ہے۔ متاثرین چاہیں تو فوری طور پر دکان کے بدلے دکان حاصل کرسکتے ہیں آسان شرائط پر فراہم کیے گئے قرضہ مدت پانچ سے آٹھ سال تک ہوگی۔

حفیظ سینٹر کی متاثرہ دکانیں بھی اصل مالکان کی ملکیت ہی رہیں گی، حفیظ سینٹر ریلیف پیکج پر حفیظ سینٹر کے دونوں گروپس کو آن بورڈ لیا جاچکا ہےجھلسنے والے سامان کی خریداری کےلیے بھی متاثرین کومائیکروفنانس کی سہولت دی جائے گی۔ پیکج کا اعلان وزیر اعظم عمران خان یا وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار جلد کریں گے۔