ائیرپورٹس پر فلائٹ آپریشن بند ؟ بڑی خبر آگئی

ائیرپورٹس پر فلائٹ آپریشن بند ؟ بڑی خبر آگئی

(سعید احمد سعید) بجلی بلوں میں مسلسل اضافے کی وجہ سے ملک بھر میں موجود ائیرپورٹس بھی متاثر ہونے لگے، مہنگی بجلی کے باعث ائیر پورٹس پر نائیٹ فلائیٹ آپریشن بھی بند کرنے پر غور شروع کر دیا، اس سلسلے میں غیر ملکی ائیرلائینز کو مراسلہ  بھی جاری کر دیا۔

بجلی بلوں میں اضافے کے باعث سول ایوی ایشن انتظامیہ کا ملک بھر کے ائیرپورٹس پر نائٹ آپریشن بند کرنے کا عندیہ دے دیا، ڈائریکٹر ائیر ٹرانسپورٹ ایوی ایشن کی جانب سے تمام ملکی وغیرملکی ائیر لائینز انتظامیہ کو مراسلہ جاری کر دیا گیا، مراسلے کے مطابق 145ویں ایاٹا کانفرنس میں ائیرلائینز کی جانب سے نائٹ آپریشن میں دشواری کا مسئلہ بیان کیا گیا تھا۔ درحقیقت گزشتہ چند سالوں میں ملک میں بجلی کے بلوں میں اضافہ ہوا جبکہ زیادہ تر غیرملکی ائیرلائینز رات اور صبح سویرے فلائیٹ آپریشن جاری رکھے ہوئے ہے۔

مراسلہ میں لکھا ہے کہ سول ایوی ایشن کو بجلی کے بلوں کی مد میں اضافی بوجھ اٹھانا پڑ رہا ہے۔ رن وے ٹیکسی لائٹس، سکیورٹی پیرامیٹرز لائٹس، ٹرمینل بلڈنگ لائٹس، اور ائیر کنڈیشنر کے بلوں میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ان مسائل کے حل کےلیے پاکستان سول ایوی ایشن کی جانب سے تمام ائیرلائینز کو 2 آپشن جاری کیے گئے ہیں، پہلی آپشن کے مطابق بجلی کے بلوں میں اضافے سے بچنے کے لیے رات 12بجے سے صبح 6بجے تک فلائیٹ آپریشن بند کر دیا جائے۔ائیرلائینز کو صبح کے وقت فلائیٹ آپریشن شروع کرنے کی اجازت دے دی جائے۔

دوسری آپشن میں آنےاور جانے والی تمام ائیرلائینز پر ائیروناٹیکل چارجز میں 20سے 25فیصد اضافہ کر دیا جائے۔ پاکستان سول ایوی ایشن انتظامیہ نے تمام ائیرلائینز سے تجاویز طلب کر لیں۔ مراسلے کے مطابق ائیرلائینز دونوں آپشن میں سے ایک آپشن سے متعلق ہیڈکوارٹر کو آگاہ کریں، حتمی فیصلہ 28فروری کو منعقدہ اجلاس میں کیا جائے گا۔حتمی فیصلہ سمر شیڈول 2020 سے لاگو ہو گا۔