پنجاب حکومت پرائیویٹ ہسپتالوں٘ میں کورونا کا مفت علاج کرانے میں ناکام

 پنجاب حکومت پرائیویٹ ہسپتالوں٘ میں کورونا کا مفت علاج کرانے میں ناکام

زاہد چوہدری:کورونا وبا کے بڑھتے خدشات ،  پنجاب حکومت پرائیویٹ ٹیچنگ ہسپتالوں٘ میں وائرس کے مفت علاج کی پابندی کرانے میں ناکام، تاحال کسی بھی پرائیویٹ ٹیچنگ ہسپتال میں مفت کرونا علاج کیلئے 50 فیصد بیڈ مختص نہیں کئے گئے،  سرکاری ہسپتالوں پر کورونا مریضوں کا دباؤ بڑھ گیا۔

کورونا وائرس کا خطرہ بڑھنے کے باوجود پنجاب حکومت تاحال پرائیوٹ میڈیکل کالجز سے منسلک پرائیوٹ ٹیچنگ ہسپتالوں میں مفت علاج کی فراہمی کو یقینی نہیں بنا سکی ہے ۔ پی ایم ڈی سی کے قواعد و ضوابط کے تحت پرائیوٹ میڈیکل کالجز سے منسلک پرائیوٹ ٹیچنگ ہسپتالوں میں 50 فیصد بستر مفت علاج کیلئے مختص کرنا لازمی ہے ۔ لیکن پنجاب حکومت کی عدم توجہی کی وجہ سے پرائیویٹ میڈیکل کالجز سے منسلک پرائیوٹ ہسپتالوں میں مفت علاج کی فراہمی کے قانون پر قطعی طور پر عملدرآمد نہیں ہورہا ۔

کورونا وائرس کی حالیہ وبا کے دوران پرائیوٹ ٹیچنگ ہسپتالوں میں مفت علاج کیلئے 50 فیصد بستر مختص نہ ہونے سے کورونا کے مریضوں کا تمام دباو سرکاری ہسپتالوں کو برداشت کرنا پڑ رہا ہے اور شہر میں کورونا وائرس کے مریضوں کو پرائیوٹ ہسپتالوں میں اپنے خرچ پر علاج کروانا پڑ رہا ہے ۔

 خیال رہے کہ پاکستان میں کورونا سے جاں بحق افراد کی تعداد 192 جبکہ کیسز کی تعداد 9216 تک پہنچ گئی۔ چوبیس گھنٹوں کے دوران 796 نئے کیسز رپورٹ ہوئے، پنجاب میں 4195، سندھ 2764 ، خیبر پختونخواہ 1276 اور اسلام آباد میں تعداد 185 ہوگئی۔ پنجاب میں اموات کی تعداد بیس ہو گئی ۔

مزید خبریں:وزیر اعظم عمران خان کو کورونا وائرس ہے؟

لاہورمیں کوروناکےتصدیق شدہ مریض629ہو گئے۔38 دنوں میں پنجاب میں کوروناسے جاں بحق ہونیوالوں کی تعداد45ہوگئی ہے ،لاہور میں مزید 2اموات سے جاں بحق ہونیوالوں کی تعداد20 تک پہنچ گئی۔ کوروناسے متاثرہ 724 مریض صحتیاب ہو چکے ہیں۔ اس وقت میو ہسپتال میں زیرعلاج تصدیق شدہ مریضوں کی تعداد 135 ہے ، پی کے ایل آئی میں 22 ، چلڈرن میں 3 ، گنگا رام اور جنرل ہسپتال میں بھی 3، سروسز میں 21 ، جناح میں 4 ، مزنگ میں 7 ،ایکسپو سنٹر ہسپتال میں 243 مریض زیر علاج ہیں۔ 1میو ہسپتال سے صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 129 ہو گئی۔