کروڑوں روپے کہاں سے آئے؟ کشمالہ طارق کیلئے مشکل کھڑی ہوگئی

کروڑوں روپے کہاں سے آئے؟ کشمالہ طارق کیلئے مشکل کھڑی ہوگئی

سعود بٹ: خواجہ آصف کے قریبی ساتھی ارشد وڑائچ اور لیگی رہنما کشمالہ طارق کے درمیان رقوم کی منتقلی، خواجہ آصف کا 12 کروڑ رقم منتقلی سے تعلق ہے یا نہیں، نیب نے تفتیش کا فیصلہ کرلیا۔

منی لانڈرنگ کیس میں نیب کی جانب سے ٹرانزیکشن میں خواجہ آصف کے تعلق کے حوالہ سے ریکارڈ طلب کیا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق کشمالہ طارق نے سال 2015 میں مبینہ طور پر 12 کروڑ کی رقوم اکاؤنٹ میں وصول کیں۔ خواجہ آصف کے قریبی ساتھی ارشد وڑائچ نے رقوم کشمالہ طارق کے اکاؤنٹ میں منتقل کیں۔

ذرائع کے مطابق کشمالہ طارق نے مذکورہ رقم سے 8 کروڑ روپے سال 2015 اور 2016 میں نکلوائے۔ نیب تفتیشی ٹیم کا کشمالہ طارق اور ارشد وڑائچ کو بھی طلب کرنے کا امکان ہے۔ 

احتساب عدالت پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئےمسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما خواجہ آصف کاکہناتھاکہ قانونی معاملات ہیں ابھی بات نہیں کرنا چاہتا جبکہ خواجہ سعدرفیق،سردارایاز صادق،رانا تنویر سمیت دیگر بھی خواجہ آصف سے اظہار یکجہتی کےلئے پہنچے۔ لیگی رہنماؤں کاکہناتھاکہ خواجہ آصف کو انتقام کانشانہ بنایا جا رہا ہے۔  مسلم لیگ (ن) کے رہنما خواجہ آصف کی پیشی کےموقع پر پولیس اور لیگی کارکنان میں دھکم پیل بھی ہوئی جبکہ گورنمنٹ ایم اے او کالج سے سیکرٹریٹ تک روڈ کو بلاک بھی کیا گیاتھا۔