غداری کرنے پر تین فوجی اہلکاروں کو سزائے موت

غداری کرنے پر تین فوجی اہلکاروں کو سزائے موت
Armed Man

مانیٹرنگ ڈیسک: ملک کے ساتھ غداری کا الزام، سعودی عرب میں فوج کے تین اہلکاروں کو سزائے موت دے دی گئی۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق وزارت دفاع کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ملک کے ساتھ غداری کا الزام ثابت ہونے پر تین فوجی اہلکاروں کو ان کی عسکری حیثیت، شرعی اور قانونی تقاضوں کو مدنظر رکھتے ہوئے سزائے موت سنادی گئی ہے۔ وزارت کا کہنا تھا کہ عسکری حلف وفاداری سے خیانت کرتے ہوئے فرسٹ سولجر محمد بن احمد بن یحییٰ عکام، فرسٹ سولجر شاہر بن عیسیٰ بن قاسم حقوی اور فرسٹ سولجر حمود بن ابراہیم بن علی الحازمی نے عسکری حیثیت میں ملک سے غداری کا ارتکاب کیا ہے۔

مذکورہ افراد نے وطن کو نقصان پہنچانے کے لئے دشمن کے ساتھ تعاون کا سنگین جرم کیا ہے، ملزموں کی جانب سے عدالت کے سامنے جرم کا اقرار کرنے کے ساتھ ساتھ  دیگر شواہد سے بھی ان پر الزام ثابت ہوا ہے۔ شرعی عدالت نے انصاف کے تمام تقاضے پورے کرنے اور جرم ثابت ہونے پر انہیں سزائے موت کا فیصلہ سنایا ہے۔

بعد ازاں ایوان شاہی نے مذکورہ افراد کے خلاف عدالتی فیصلہ نافذ کرنے کی منظوری دی۔ وزارت کا کہنا ہے کہ مذکورہ افراد کو آج ہفتہ کے دن جنوبی علاقے کی چھاؤنی میں سزائے موت دی گئی ہے۔ وزارت کے اس فیصلے نے مسلح افواج سے وابستہ افراد کی وفاداری اور وطن کے لئے جان نثار کرنے والوں کے جذبات کو سراہا ہے۔