پاکستان کڈنی لیور انسٹیوٹ اینڈ ریسرچ سنٹر کوچلانے کے لئے بڑے فیصلے

PM shahbaz sharif presided over meeting on PLKI lahore
کیپشن: PM shahbaz sharif presided over meeting on PLKI
سورس: city42
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

   زین العابدین : پی کے ایل آئی کی کے انتظامی امور چلانے کے لیے  وزیراعظم کا بڑا اقدام۔ ادارے کو ٹرسٹ چلائے گا۔  بیدیاں روڈ پر فوراسٹار ہوٹل اور کمرشل مارکیٹ بنے گی ۔

 رپورٹ کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف نے سعودی عرب اورمتحدہ عرب امارات کے کامیاب دورے سے واپسی پر لاہور میں ایک اعلی سطحی اجلاس کی صدارت کی جس   میں پی کے ایل آئی کو چلانے کے لئے اہم فیصلے کئے گئے ۔

اجلاس میں وزیر اعظم کو پی کے ایل آئی کے انتظامی امور پر تفصیلی بریفنگ دی گئی. اجلاس میں وزیراعظم کو بتایا گیا کہ گزشتہ سال میں دو سو نوے کڈنی ٹرانسپلانٹ اور ایک سو نوے لیور ٹرانسپلانٹ کئے گئے. ان مریضوں میں سے صرف 17 فیصد کو ہی مفت علاج کی سہولت فراہم کی گئی. مزید وزیرِ اعظم کو ہسپتال کے ساتھ نرسنگ یونیورسٹی کے منصوبے پر پیش رفت سے بھی آگاہ کیا گیا. وزیراعظم نے پی کے ایل آئی کے منصوبے کی تکمیل میں کوتاہی برتنے پر افسوس کا اظہار کیا۔

 وزیراعظم نے پی کے ایل آئی میں مریضوں کو دئیے جانے والی موجودہ سہولیات کو غیر تسلی بخش قرار دیا. وزیرِ اعظم نے ہسپتال میں سہولیات کو عالمی معیار کے مطابق بنانے اور  کم از کم پچاس فیصد غریب مریضوں کو مفت علاج فراہم کرنے کی ہدایات جاری کیں. وزیراعظم کا کہنا تھا کہپی کے ایل آئی کا مقصد ہی پورے ملک کے غریب اور نادار لوگوں کو مفت ٹرانسپلانٹ کی سہولت فراہم کرنا تھا، تاکہ انہیں خطیر رقم خرچ کرکے علاج کیلئے دوسرے ممالک نہ جانا پڑے. 

وزیراعظم نے پی کے ایل ائی کو مالی طور ہر خود مختار بنانے کے لئے چیف سیکرٹری پنجاب کو ہدایت کی کہ وہ مکمل حکمت عملی مرتب کرکے تین دن میں پیش کریں. مالی وجوہات کی وجہ سے بھی مریض کو علاج سے محروم نہ رکھا جائے.  وزیراعظم شہبازشریف کا کہنا تھا کہ  صحت کی معیاری سہولیات کے حصول میں ملک کے غریب افراد کو مسائل ہیں، انہیں عالمی معیار کی سہولیات کی مفت فراہمی حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے۔

وزیر اعظم نے نادار اور مفلس طبقے کو عدم توجہ دینے کی سوچ کو بدلنے اور انکی خدمت کو ترجیحات میں سر فہرست رکھنے کی ضرورت پر زور دیا۔وزیراعظم نے ہدایت جاری کی کہ پی کے ایل آئی کو ٹرسٹ بنایا جائے ۔

اجلاس میں خواجہ سلمان رفیق، خواجہ عمران نذیر، چیف سیکٹری پنجاب، پنجاب ہیلتھ سیکٹری، متعلقہ اعلی حکام اور پی کے ایل آئی کے عہدیداران کی شرکت.۔پی کے ایل آئی کو چلانے کے لیے  ٹرسٹ قائم کرنے کا فیصلہ  کیا گیا ہے ۔پاکستان کڈنی لیور انسٹیوٹ اینڈ ریسرچ سنٹر کے اخراجات ٹرسٹ سے  پورے کئے  جائیں گے محکمہ صحت پنجاب  نے وزیر اعلی پنجاب کو پی کے ایل آئی پر  باقاعدہ بریفنگ دی ذرائع  کے مطابق فیصلہ کیا گیا ہے کہ پی کے ایل آئی کے پاس بیدیاں روڈ پر فور سٹار ہوٹل یا جدید طرز کی کمرشل مارکیٹ بنائی جائے گی  جس سے حاصل ہونے والی  آمدن  سے پی کے ایل آئی کو  چلایا جائے گا۔ ٹرسٹ کیساتھ ساتھ حکومت بھی پی کے ایل آئی کے لیے فنڈ مہیا کرے گی ۔ٹرسٹ قائم کرنے سے حکومت پر بجٹ کے حوالے سے بوجھ کم پڑے گا ۔