روپے کی بے قدری، ڈالر کی قیمت میں دوبارہ اضافہ

روپے کی بے قدری، ڈالر کی قیمت میں دوبارہ اضافہ

سٹی42: روپے کی بے قدری دوبارہ شروع ہو گئی، انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر ایک روپے اٹھارہ پیسے مہنگا ہو گیا،  یورو اور برطانوی پاونڈ کی قدر بھی بڑھ گئی۔

مارکیٹ میں ڈالر اور دوسری کرنسیوں کے مقابلے میں روپیہ سستا ہو گیا،  اسٹیٹ بینک کے مطابق انٹر بینک مارکیٹ میں کاروبار کے اختتتام پر ڈالر کی قدر 1 روپے 18 پیسے کے اضافے سے 161 روپے 65 پیسے رہی. یورو کی قدر 3 روپے 16 پیسے بڑھ کر 175 روپے 48 پیسے، جبکہ برطانوی پاونڈ کی قدر 3 روپے 94 پیسے بڑھ کر 201 روپے 57 پیسے ہو گئی۔

ایکس چینج کمپنیز ایسوسی ایشن کے مطابق اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت فروخت 1 روپے کے اضافے سے 160 روپے 50 پیسے ہو گئی، یورو کی قیمت فروخت بھی 1 روپے کے اضافے سے 173 روپے ، اور برطانوی پاونڈ کی قیمت 3 روپے کے اضافے 199 روپے ہو گئی۔

دوسری جانب بین الاقومی مالیاتی ریٹنگ ایجنسی موڈیز نے بھی کورونا کے باعث پاکستان کے جی ڈی پی میں رواں مالی سال صفر اعشاریہ پانچ فیصد تک کمی کا تخمینہ لگایا ہے، آئی ایم ایف نے اس سے پہلے اپنی رپورٹ میں پاکستان کی جی ڈی پی میں 1.5فیصد تک کمی کا اندازہ ظاہر کیا تھا.

موڈیز نے کہا کہ کوروناوائرس کےمعاشی اثرات کےسبب پاکستان کی فنانسنگ ضرورت بڑھےگی، حکومت نے 1200 ارب روپے کا ریلیف پیکیج دیا ہے، جبکہ آئی ایم ایف کی طرف سے 1.4 ارب ڈالر کے ہنگامی قرضے اور بیرونی قرضوں کی واپسی مین ریلیف ملنے سے معاشی مشکلات کم کرنے میں مدد ملے گی، تاہم رواں مالی سال مالیاتی خسارہ جی ڈی پی کا 9.50 سے 10 فیصد ہونے اور حکومتی قرض جی ڈی پی کے 87 فیصد ہونے کا امکان ہے.

واضح رہے کہ کورونا نے نہ صرف پاکستان بلکہ پوری دنیا کی معی‍شت کی دھجیاں اڑا دی ہیں,سال 2020 کی پہلی سہ ماہی عالمی معیشت کے لیے تباہ کن ثابت ہوئی، کورونا وائرس کے خوف سے صنعتیں بند، اسٹاک مارکیٹوں میں شئیرز کی مجموعی مالیت کھربوں ڈالر کم ہو گئی.