مشیر برائے قومی سلامتی ڈاکٹر معید یوسف نے بھارتی صحافی کو کھری کھری سنا دی

 مشیر برائے قومی سلامتی ڈاکٹر معید یوسف نے بھارتی صحافی کو کھری کھری سنا دی
مشیر برائے قومی سلامتی

ویب ڈیسک :  مشیر برائے قومی سلامتی ڈاکٹر معید یوسف نے بھارتی صحافی کرن تھاپر کو لاجواب کردیا۔ بھارت کو واضح کردیا کہ ہر پاکستانی آخری وقت تک کشمیریوں کے ساتھ کھڑا ہے جب تک مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق  حل نہیں ہوتا مذاکرات ناممکن ہیں۔

رپورٹ کے مطابق بھارتی صحافی کرن تھاپر کو اپنے دوسرے انٹرویو کے دوران قومی سلامتی کے مشیر معید یوسف نے کہا ہے کہ بھارت کے خطے میں امن کو خراب کرنے کے لئے تخریب کاری کے ثبوت موجود ہیں، لاہور دھماکے کے تانے بانے بھارت سے جڑتے ہیں ۔ ثبوت بھی سامنے رکھ دئیے، بھارت کو پاکستان میں دہشتگردی روکنی ہوگی۔

انہوں نے واضح کیا کہ پاکستان ہمیشہ امن کے لیے کوشاں رہا ہے مگر بھارت کی ہندوتوا سوچ آڑے آرہی ہے بھارت کی حکومت آر ایس ایس اور فاشسٹ ایجنڈے پر عمل پیرا ہے ۔ انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ بھارتی وزیر خارجہ نے قبول کیا کہ بھارت نے ایف اے ٹی ایف کو سیاسی عزائم کے لیے استعمال کیا، بھارت نے افغانستان کو پاکستان کے خلاف دہشتگردی کا گڑھ بنا رکھا ہے پاکستان افغانستان کے مسئلے کے لیے سیاسی حل کے لیے کوشش کرتا رہے گا۔

معید یوسف نے کرن تھاپر سے سوال کیا کہ  کیا مودی ہندوتوا حکومت سے ایک مہذب رویے کی امید کی جاسکتی ہے؟  کیا وجہ ہے کہ بھارت میں مودی کو ہٹلر سے مطابقت دی جا رہی ہے،  جس پربھارتی صحافی کرن تھاپر لاجواب ہو کر رہ گئے۔ معید یوسف کی جانب سے بھارتی صحافی کو پاکستان آنے کی بھی دعوت بھی دی گئی۔