ایاسا کاپاکستانی طیاروں پر پابندی ہٹانےسے انکار

ایاسا کاپاکستانی طیاروں پر پابندی ہٹانےسے انکار
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

سٹی 42: یورپی سیفٹی ایجنسی ایاسا کاپاکستانی طیاروں پر پابندی ہٹانےسے انکار, یورپی ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی نےپی آئی اے کےخط کا جواب دے دیا۔

یورپی ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی نے پی آئی اے کے خط کا جواب دے دیا۔ ایاسا کے جاری کردہ جواب کے مطابق اکاؤآڈٹ کے باوجود قومی ائر لائن (پی آئی اے) کی یورپ کے لیے پروازوں پر پابندیاں ختم نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ خط میں کہا گیا ہے کہ پی آئی اے سے پابندی ہٹانے کیلئے  ایاسا سول ایوی ایشن کا آڈٹ کرائے گی اور آڈٹ کے بعد یورپی روٹ کی پابندیاں ختم کرنے کا حتمی فیصلہ کیا جائے گا۔ عالمی ہوابازی کی تنظیم اکاؤآڈٹ کا یورپی روٹ پر پابندی سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

ایاسا اکاؤآڈٹ کے بعد بھی سول ایوی ایشن کی کارکردگی کا جائزہ لے گی اور ایاسا تیسرے ملک کے ذریعے پابندی اٹھانے کے لیے آڈٹ کرا سکتا ہے جبکہ پابندیاں ہٹانے کے لیے ایاسا متعلقہ حکام سے مشاورت کرے گا۔ خط کے متن کے مطابق پیشہ ورانہ لائسنس سے متعلق ایاسا حکام کی تحقیقات جاری ہیں اور کورونا کے باعث ایاسا عملے کی سفری سرگرمیاں محدود ہیں جبکہ کورونا صورتحال بہتر ہوتے ہی آڈٹ کرایا جائے گا۔ پی آئی اے کسی بھی پیش رفت سے متعلق ایاسا کو آگاہ کرسکتا ہے۔