مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی نے بجٹ مسترد کردیا

مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی نے بجٹ مسترد کردیا

 (سعد یہ خان) پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز اور پیپلز پارٹی کے پارلیمانی لیڈر حسن مرتضی نے بجٹ 20-2019ء کو یکسر مسترد کر دیا۔

پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز نے بجٹ کو ملک کا بد ترین بجٹ قرار دے دیا،انہوں نے کہا ہے کہ ایک حجام، ٹیکسی والے، لانڈری والے، دھوبی اور ڈاکٹر پر 16 فیصد ٹیکس لگا دیا۔ پنجاب کی باگ ڈور اس شخص کے پاس ہے جو قابل ہی نہیں،ملکی معیشت اب وینٹی لیٹر پہ نہیں بلکہ مر گئی ہے اسے دفنا دیں۔

پیپلز پارٹی کے پارلیمانی لیڈر حسن مرتضیٰ نے کہا ہے کہ ملکی معیشت دھکے سے نہیں چلتی، ہر روز معیشت کو ٹیکہ لگانا پڑ رہا ہے۔

حمزہ شہباز نے کہا کہ عمران نیازی نے نواز شریف، حمزہ شہباز آصف زرداری سمیت دیگر سیاست دانوں کو گرفتار کرکے سب کچھ کر لیا، اب تو کچھ کر کے دکھاؤ، ملکی تاریخ میں پہلی بار 37 روپے ڈالر کی قیمت میں اضافہ ہوا۔