میڈیا میں 35 ارب روپے کی کرپشن کا تاثر دیا جا رہا ہے: اعتزاز احسن


سعدیہ خان :پاکستان پیپلزپارٹی نے الیکشن میں سکیورٹی اداروں کے اہلکاروں پر پری پول دھاندلی کا الزام لگاتے ہوئے الیکشن کمیشن سے معاملے کا نوٹس لینے کا مطالبہ کر دیا۔ فرحت اللہ بابر کا کہنا ہے کہ ایک نئی آئی جے آئی بنانے کو کوشش کی جا رہی ہے۔

یہ بھی لازمی پڑھیں:نیوز بلیٹن3بجے 13 نومبر 2018  

پاکستان پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری اور فریال تالپور کا نام ای سی ایل میں ڈالے جانے کے معاملے پر بلاول ہاوس میں اعلیٰ سطحی اجلاس ہوا۔ جس کی صدارت سابق صدر پاکستان آصف علی زردار اور چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے کی۔ اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو میں اعتزاز احسن نے کہا کہ بلاول ہاؤس پر چسپاں کیا جانے والا نوٹس ایک کروڑ 50 لاکھ کا ہے۔ جبکہ میڈیا میں 35 ارب روپے کی کرپشن کا تاثر دیا جا رہا ہے۔

اس خبر کو لازمی پڑھیں:نواز شریف کا استقبال کیا جائے یا نہیں؟ (ن) لیگ کشمکش کا شکار

فرحت اللہ بابر نے کہا کہ سکیورٹی اداروں کے اعلیٰ افسران امیدواروں کو ڈرا دھمکا رہے ہیں۔ جس کے ثبوت بھی موجود ہیں۔ نئی آئی جے آئی بنانے کی کوشش کی جا رہی ہے، تاہم ماضی کی آئی جے آئی کا حال سب دیکھ چکے ہیں۔

یہ بھی لازمی پڑھیں:شہباز شریف کو ٹھنڈ لگ گئی

میڈیا سے گفتگو میں شیریں رحمان کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی کسی صورت بھی الیکشن کا بائیکاٹ  نہیں کرے گی، تاہم جن حالات میں الیکشن کرائے جا رہے ہیں، الیکشن کمیشن کو اس کا نوٹس لینا چاہیے۔