تضحیک برداشت نہیں، عزت کی موت کو ترجیح دوں گا: میاں نواز شریف

تضحیک برداشت نہیں، عزت کی موت کو ترجیح دوں گا: میاں نواز شریف

سٹی42:  سابق وزیراعظم نواز شریف کو والدہ، بھائی اور بیٹی بھی جیل سے ہسپتال منتقلی کیلئے راضی نہ کرسکے،  میاں نواز شریف  کہتے ہیں علاج کے نام پرتضحیک  برداشت نہیں،  عزت  کی موت کو ترجیح دوں گا،شہباز شریف نے بڑے بھائی کی صحت غیرتسلی بخش قرار دیدی۔

صدر مسلم لیگ ن شہباز شریف نے کوٹ لکھپت جیل میں  میاں نواز شریف  سے ملاقات کی جس میں ان کی صحت اور اسپتال منتقلی کے معاملے پر گفتگو ہوئی۔حکومت سے ناراض  میاں نواز شریف  نے نہ چاہتے ہوئے اپنی والدہ کی بات بھی نہ مانی۔ والدہ،بھائی اوربیٹی  میاں نواز شریف  کو اسپتال جانے کیلئے راضی نہ کرسکے۔ میاں نواز شریف  نے والدہ سےدعاکی درخواست کی اورکہاکہ جواللہ کو منظورہوا ہوجائے گا،  عزت  کی موت کو ترجیح دوں گا۔ اسپتال اسپتال گھمانے اور علاج کے نام پر  تضحیک   برداشت نہیں، اب تک کوئی سہولت فراہم نہیں کی گئی،حکومت علاج کے نام پرسیاست کررہی ہے۔

اپوزیشن لیڈرشہبازشریف نے کہاکہ پارٹی قائد کی صحت ٹھیک نہیں،ان کو بازو میں درد کی بار بار شکایت سامنے آرہی ہے جو تشویشناک علامت ہے۔ مریم نوازنے ٹوئٹ میں کہاکہ  میاں نواز شریف  اسپتال جانے پر راضی نہیں ہوئے۔  صحت خرابی کے باعث ان سےجیل میں ملاقاتیں نہیں ہو گی،اُدھر جیل حکام نے  میاں نواز شریف  کے چیک اپ کیلئےپی آئی سی کے ڈاکٹرز کو خط لکھنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

شازیہ بشیر

Content Writer