ہزاروں ڈیلی ویجز ورکرز فارغ کرنے کا فیصلہ

ڈینگی،ڈیلی ویجز،ورکرز،ہیلتھ اتھارٹی،سٹی42
کیپشن: File photo
سورس: google
Stay tuned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

(راؤ دلشاد)انسداد ڈینگی مہم کو بڑا دھچکا ،لاہوریوں کو ڈینگی کے رحم و کرم پر چھوڑ دیاگیا، ڈینگی کے ڈنگ روز بروز تیز ہونے لگے تو ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی نےبھی انوکھا فیصلہ کرلیا، ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی کاڈینگی سرویلینس کرنے والے6 ہزار 100 ڈیلی ویجز ڈینگی ورکرز کو نوکری سے فارغ کرنے کا فیصلہ کر لیا۔

ڈینگی کے پیک سیزن باوجود لاہور کے نو زونز میں ڈینگی سرویلینس کرنے والے ڈینگی ورکرز کو 89 دنوں کے کیے مزید توسیع نہ دینے کا فیصلہ کیاگیا ۔ذرایع کے مطابق ورکر ڈینگی ورکرز کو 970 روپے یومیہ اجرت دی جاری ہےستمبر کے چھے روز کی تنخواہ بھی ادا نہیں کی جائے گی۔ ڈیلی ویجز ڈینگی ورکرز کی تنخواہوں کی مد میں 59 لاکھ 17 ہزار روپے کس کی جیب میں جائیں گے سب بتانے سے قاصر ہیں۔

ڈسڑکٹ ہیلتھ اتھارٹی نے ڈیلی ویجز ڈینگی ورکرز کو زبانی حکم پر نوکری سے برخاست کرنے کی ہدایت کی ڈپٹی ڈسٹرکٹ آفیسرز ہیلتھ کو زبانی اور بعذریہ واٹس ایپ ڈینگی ورکرز کو مزید کنٹریکٹ نہ دینے کےنئے حکم نامے سے آگاہ کردیاگیا۔گھر گھر جاکر ڈینگی سرویلینس کرنے والے ڈینگی ورکرز کاکنٹریکٹ 30 ستمبر کو ختم ہونا ہے لیکن ورکرز کو 24 ستمبر سے ہی نوکری سے فارغ کردیاگیا، ڈیلی ویجز ڈینگی ورکرز کو89 روز بعد دوبارہ کنٹریکٹ دینا ہوتا ہےپی ٹی آئی کے دور حکومت میں ہی ڈینگی ورکرز کی بھرتی کا عمل مکمل کیاگیا۔