پسند کی شادی پر لڑکی، لڑکے والوں میں مکوں،تھپڑوں کا تبادلہ

پسند کی شادی پر لڑکی، لڑکے والوں میں مکوں،تھپڑوں کا تبادلہ
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

(جمالدین جمالی)پسند کی شادی کا معاملہ، کینٹ کچہری میدان جنگ بن گئی،لڑکی کے گھر والوں نے لڑکے کی دھلائی کر دی۔

تفصیلات کے مطابق پسند کی شادی پر کینٹ کچہری میں فریقین میں شدید ہنگامہ آرائی ہوئی ،کچہری میدان جنگ بن گئی، لڑکی کے ورثاء کینٹ کچہری میں لڑکے پر ٹوٹ پڑے،فریقین میں کافی دیر مکوں اور تھپڑوں کا تبادلہ ہوتا رہا،لڑکے کے ساتھیوں نے لڑکی کے بھائی اور باپ کوتھپڑ مارے۔

لڑکی کی ماں اور دادی کا کہنا تھا کہ اصغر نامی لڑکا رات کو ہماری بچی کو گھر سے لے گیا، بچی گلناز کی عمر ابھی چودہ سال ہے، ہماری بچی ہمارے حوالے کی جائے جبکہ لڑکی کا کہنا تھا میں نے اپنی مرضی سے شادی کی ہے ، اصغر نےمجھے نہیں بھگایا ، اپنی مرضی سے اسکے ساتھ گئی، لڑکی کا کہناتھا کہ میری عمر20 سال ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز بھی کچھ ایسا ہی کیس سامنےآیا تھا جہاں  سبزہ زار کی رہائشی لڑکی نے والدین سے علیحدگی اور تحفظ کے لئے عدالت کا دروازہ کھٹکھٹایا، ثانیہ زہرہ نامی لڑکی نے ضلع کچہری میں درخواست دی، جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ اس کے والدین زبردستی بوڑھے شخص سے شادی کرانا چاہتے ہیں، انکار پر اسے تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔

لڑکی کے مطابق وہ بالغ ہے، اپنی پسند سے شادی کر کے مرضی کی زندگی گزارنا چاہتی ہے، عدالت سے درخواست کی گئی کہ وہ اپنے والدین کے ساتھ نہیں رہنا چاہتی، عدالت اسے تحفظ بھی فراہم کرے۔