نادرا کا نیا کارنامہ

نادرا کا نیا کارنامہ

 (رضوان نقوی) نادرا پیکو روڈ سنٹر کے عملہ کی سنگین غلطی، ٹاﺅن شپ کی محنت کش خاتون کی ایک بیٹی کی تاریخ پیدائش والدین کے نکاح سے بھی دو سال پہلے کی درج کردی جبکہ دوسری کا نام ہی بدل دیا۔

زلیخاں بی بی کی بیٹیوں کو بنک اکاﺅنٹ کھلوانے میں شدید پریشانی کا سامنا ہے۔ محنت کش خاتون کا کہنا ہے کہ وہ لکھنا پڑھنا نہیں جانتی، زلیخاں بی بی کا نکاح 1993ء میں ہوا جبکہ نادرا کے عملہ نے انکی بیٹی کے شناختی کارڈ پر تاریخ پیدائش 1991ء درج کر دی۔

زلیخاں بی بی کا کہنا ہے کہ بیٹی کی جنم پرچی پر تاریخ پیدائش 1997ء لکھوائی، نادرا نے غلطی سے 1991ء درج کردی جبکہ دوسری بیٹی کا نام رمضانہ سے تبدیل کرکے رمضان کردیا۔

  زلیخاں بی بی  کا مزید کہنا  ہے کہ وہ نادرا دفاتر کے چکر لگا کرعاجز آچکی ہے، اعلیٰ حکام نوٹس لے کرانکی بیٹیوں کے قومی شناختی کارڈز پر دفتری غلطیوں کی تصحیح کروائیں۔