پنجاب حکومت نے وفاق کی مخالفت کردی

پنجاب حکومت نے وفاق کی مخالفت کردی
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

سٹی 42:وفاقی حکومت کی جانب سے بندش کے فیصلے کیخلاف میرج ہالز ایسوسی ایشن نے 17 نومبر کو احتجاج کا اعلان کر دیا ہے۔جبکہ پنجاب حکومت نے بھی وفاقی حکومت کے شادی ہالز کی بندش کے فیصلے کی مخالفت کردی ہے۔

ذرائع کے مطابق شادی ہالز ایسوسی ایشن کے بعد  پنجاب حکومت نے بھی شادی ہالز کی بندش کی مخالفت کر دی ہے۔ پنجاب حکومت شادی ہالز کی بندش کے بجائے ایس او پیز کے ساتھ اجازت کا حامی ہے۔شادی ہالز کو ان کی گنجائش کے 50 فیصد کسٹمرز کے ساتھ اجازت دینے کی تجویز دی گئی ہے۔ مارکیز کے حوالے سے بھی ایس او پیز کو یقینی بنایا جائے گا۔ پنجاب حکومت نے متبادل تجویز مرتب کرکے سفارشات این سی او سی کے اجلاس میں پیش کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

ادھر صدر میرج ہالز ایسوسی ایشن خالد ادریس بھٹی کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ابھی ہمارے پچھلے نقصانات پورے نہیں ہوئے۔ 20 نومبر کو میرج ہالز بند نہیں کریں گے۔ یہ کونسا کورونا ہے، جو جلسوں میں نہیں پھیلتا، صرف میرج ہالز میں رہتا ہے۔نائب صدر میرج ہالز ایسوسی ایشن ملک عقیل کا اس مقوع پر کہنا تھا کہ وفاقی اسد عمر کو میرج ہال فوبیا ہو چکا ہے۔ این سی او سی کے اجلاس میں صرف میرج ہالز پر بات ہوتی ہے۔ ہم اپنے مہمانوں کو ایس او پیز پر جیب سے ماسک خرید کر عملدرآمد کرواتے ہیں۔ حکومت نے فیصلہ واپس نہ لیا تو سڑکوں پر ہوں گے۔صدر پنجاب کیٹررز ایسوسی ایشن ملک اشفاق نے کہا کہ پہلے ہی نقصانات سے بجلی کے میٹر اتر چکے، ملازمین کی تنخواہیں ادا نہیں ہو سکیں۔ میرج ہالز میں جتنے ٹیسٹ ہوئے، تمام منفی نکلے، حکومت فیصلے پر نظر ثانی کرے۔