پاکستانی نوجوان کے عشق میں مبتلا غیر ملکی خاتون نے انتہائی قدم اٹھا لیا

پاکستانی نوجوان کے عشق میں مبتلا غیر ملکی خاتون نے انتہائی قدم اٹھا لیا

ویب ڈیسک: دل ہونا چاہیے جوان۔۔عمروں میں کیا رکھا ہے، ڈنمارک کی 70 سالہ خاتون عشق کے ہاتھوں مجبور ہو کر شادی کرنے پاکستان پہنچ گئی۔

تفصیلات کے مطابق ڈنمارک کی رہائشی خاتون دل کے ہاتھوں مجبور ہو کرشادی کرنے کیلئے چیچہ وطنی پہنچ گئی، ڈنمارک کی رہائشی 70 سالہ خاتون کو 30 سالہ محمد معروف سے ملائشیا میں عشق ہوا اور دونوں ملاقاتوں کا سلسلہ شروع ہو گیا۔ محمد معروف ملائشیا میں تعلیم مکمل کرنے کے بعد واپس پاکستان اپنے گھر چیچہ وطنی آگیا تو دل کے ہاتھوں مجبور ہو کر 70 سالہ کرسٹن بھی اس کے پیچھے پاکستان پہنچ گئی اور آج دونوں کا باقاعدہ نکاح ہو گیا۔

نکاح کی تقریب ان کے گھر میں سادگی سے ہوئی، نکاح کے بعد کرسٹن نے اپنا نام اور مذہب تبدیل نہیں کیا۔ کرسٹن نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ پہلی بار پاکستان آئی ہے اور وہ معروف سے شادی کر کے خوش ہے۔ دوسری جانب محمد معروف بھی خوشی سے پھولے نہیں سما رہا، اس کا کہنا تھا کہ ہماری پہلی ملاقات ملائشیا میں ہوئی تھی جب میں پڑھنے کے لئے وہاں گیا تھا۔

شادی کہ بعد کرسٹن واپس ڈنمارک چلے جائے گی میں یہی پاکستان میں رہوں گا اور کرسٹن 3 یا 4 ماہ بعد پاکستان آیا کرے گی۔ اس خوشی میں علاقہ میں مٹھائی تقسیم کی گئی۔ نکاح کے بعد نوبیاہتا جوڑے کے ساتھ معروف کے اہلخانہ بھی بہت خوش ہیں۔