پنجاب حکومت مرغی کے گوشت کی قیمت کنٹرول کرنے کیلئے سرگرم

پنجاب حکومت مرغی کے گوشت کی قیمت کنٹرول کرنے کیلئے سرگرم

قذافی بٹ : پنجاب حکومت برائلرکی قیمتوں کوکنٹرول کرنے کے لیے سرگرم، پولٹری ایسوسی ایشن،ٹریڈرز،مارکیٹ کےنمائندوں اورسرکاری افسران پرمشتمل کمیٹی تشکیل دے دی گئی،وزیر صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال کی پولٹری ایسوسی ایشن کےوفد سےملاقات  کی ہے،کہتے ہیں کہ مہنگائی مافیا کوکسی صورت عوام کا استحصال نہیں کرنے دیں گے۔

پنجاب حکومت نےچکن کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے کو کنٹرول کرنےکےلیےکوششیں شروع کردی ہیں،حکومت سٹیک ہولڈرز کے ساتھ مشاورت سےاقدامات اٹھائےگی،صوبائی وزیرصنعت اسلم اقبال سےپولٹری ایسویسی ایشن کےوفد کی ملاقات میں پولٹری انڈسٹری کودرپیش مسائل اور برائلرکی قیمتوں سے متعلقہ امور پر بات چیت کی گئی۔

میاں اسلم اقبال نےمرغی کے گوشت کی طے کردہ نرخوں سے زائد پر فروخت پرسخت اظہار ناراضگی کرتے ہوئےکہا کہ پولٹری ایسویسی ایشن نےاپنی کمٹمنٹ کو پورا نہیں کیا،جس پر بے حد افسوس ہے،عام آدمی کامفاد مقدم اور تحفظ کےلیےہرحد تک جائیں گے،پولٹری ایسویسی ایشن کےچیئرمین راو منصب کا کہنا تھا کہ پولٹری انڈسٹری بحران سےدوچارہے،پرائسز کاایسا مکینزم بنایا جائے جس سے صارفین سمیت سب کو فائدہ ہو۔

دوسری جانب مکہ کالونی بازار میں سرکاری نرخنامہ کی کھلے عام خلاف ورزی جاری ہے، 20 روپےکلو والے ٹماٹر کا ریٹ40 روپے فی کلو وصول کیا جا رہا ہے، جبکہ 150والا لیموں 280 روپےفی کلو میں فروخت ہوتا رہا، 100 روپےوالےمٹر120 میں ،37 روپے والی گاجر 50 روہے،60 والی شملہ مرچ 100 روپے، 18 والی پالک 40 روپے،40 والے کریلے 60 روپےفی کلو،320 والا ادرک 360 روپےمیں اور150 والے لہسن کا ریٹ 280 روپے فی کلو لگا یا گیا۔

یاد  رہے کہ شہر میں مرغی کی قیمت کی پرواز تھم نہ سکی اور مرغی کا گوشت 350 روپے فی کلو میں ہی  فروخت ہورہا ہےجبکہ سرکاری نرخنامے کے مطابق مرغی کے گوشت کی  قیمت 260 روپے فی کلو مقرر کی گئی، لاہور  شہر میں  مرغی کا گوشت سرکاری نرخنامے کے مطابق آج بھی  فروخت نہ ہو سکا، قیمت میں کمی کی بجائے مارکیٹ میں مہنگا ہوگیا، پاکستان پولٹری ایسوسی ایشن نے مرغی کی بڑھتی ہوئی قیمت کا ذمہ دار حکومت کو ٹھہرا دیا۔