ہر بینک 2 دن کے اندر اکاؤنٹ کھولنے کا پابند، اسٹیٹ بینک کا بڑااعلان

State Bank
کیپشن: State Bank
سورس: google
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

ویب ڈیسک: پاکستان  اسٹیٹ بینک نے اعلان کیا ہے کہ اگر کوئی بھی بینک دو روز کے اندر اکاؤنٹ نہ کھولے تو اس کی شکایت کی جاسکتی ہے۔

 نئے رولز کے تحت بینکوں کو پابند کیا گیا ہے  ہے کہ دستاویزات جمع کرانے کے بعد دو روز کے اندر صارف کو اکاؤنٹ کھولنے یا نہ کھولنے کے بارے میں لازما بتایا جائے گا۔ جنوری 2022 سے تمام بینکوں کے لیے لازم ہو گا کہ وہ صارفین کو ڈیجیٹل اکاؤنٹ کھولنے کا آپشن دیں جس کے لیے بائیومیٹرک تصدیق کا عمل ریموٹ طریقے سے کیا جائے جائے گا اور صارف کو بینک برانچ آنے کی ضرورت نہیں ہو گی۔

صارفین کے اکاؤنٹس انہیں بینک بلائے بغیر ویب سائٹ، پورٹل، موبائل ایپلیکیشن اور ڈیجیٹل کیوسک کے ذریعے کھولے جا سکیں گے۔نئے فریم ورک کے تحت سیونگز اور کرنٹ اکاؤنٹ تو کھولے ہی جا سکتے ہیں جب کہ چار مختلف کیٹیگریز کے تحت ’آسان ڈیجیٹل اکاؤنٹ‘، ’آسان ڈیجیٹل ریمیٹنس اکاؤنٹ‘، ، ’فری لانسر ڈیجیٹل اکاؤنٹ‘ اور ’ڈیجیٹل اکاؤنٹ‘بھی کھلوائے جا سکیں گے۔

شرح سود میں حالیہ اضافے کے بعد بینک صارفین کے لیے مرکزی بینک کے قوانین کے مطابق سیونگز اکاؤنٹ پر شرح منافع میں ڈیڑھ فیصد کا اضافہ ہوا ہے، جس سے یکم دسمبر سے کم از کم شرح منافع سات اعشاریہ 25 فیصد ہو گئی ہے۔

سٹیٹ بینک کے مطابق اگر صارفین کے بینک انہیں سیونگز اکاؤنٹس پر اس شرح سے کم منافع دیں تو اپنی شکایت بینک کے پاس درج کرائیں، اگر اس کا ازالہ نہ ہو تو سٹیٹ بینک آف پاکستان کے کسٹمر کمپلینٹس شعبہ سے فون نمبر 021111727273 یا ای میل cpd.helpdesk@sbp.org.pk پر ای میل کریں۔