بیٹی کی تعیناتی پر ڈاکٹر یاسمین راشد کی وضاحت سامنے آ گئی

بیٹی کی تعیناتی پر ڈاکٹر یاسمین راشد کی وضاحت سامنے آ گئی

سٹی 42: صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے اپنی بیٹی کی تعیناتی کے معاملے پر وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے ان کی بیٹی کی ڈاکٹر عائشہ کی تعیناتی میرٹ پر کی گئی ہے اگر مزید شبہات ہیں تو نیچے وائس چانسلر بیٹھے ہیں آپ جا کر ان سے وضاحت طلب کرسکتے ہیں ۔ بیٹی کی تعیناتی پر پہلے بھی وضاحت دے چکی ہوں۔ 

واضح رہے کہ کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی میں صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد کی بیٹی کو بھرتی کرنے کیلئے نیا شعبہ قائم کیا گیا تھا اور وزیرصحت کی بیٹی کو براہ راست گریڈ انیس میں اسسٹنٹ پروفیسر فیٹل میڈیسن بھرتی کیا گیا تھا۔

صوبائی وزیر صحت کی بیٹی ڈاکٹر عائشہ کو پیرا شوٹ کے ذریعے گریڈ 19 میں کنٹریکٹ کی بجائے مستقل بھرتی کیا گیا تھا اور بھرتی ہوتے ہی وزیر صحت کی صاحبزادی رخصت لے کر لندن چلی گئیں۔ ذرائع کے مطابق ڈاکٹر یاسمین راشد کی بیٹی ڈاکٹر عائشہ علی کو نوازنے کیلئے فاطمہ جناح میڈیکل یونیورسٹی میں بھی فیٹل میڈیسن کا شعبہ قائم کیا گیا تھا۔

ڈاکٹر عائشہ کوفاطمہ جناح یونیورسٹی میں بھی اسسٹنٹ پروفیسر فیٹل میڈیسن بھرتی کیا گیا تاہم نظر انداز کئے گئے امیدواروں کے احتجاج پر وزیر صحت کی بیٹی کی بھرتی کا نوٹیفکیشن جاری نہیں کیا گیا تھا۔ فاطمہ جناح میڈیکل یونیورسٹی میں ناکامی کے بعد اب وزیر صحت کی بیٹی کو کنگ ایڈورڈ میں بھرتی کیا گیا۔

ریکروٹمنٹ کے ساتھ ہی وزیر صحت کی بیٹی ڈاکٹر عائشہ علی کو بیرون ملک جانے کی رخصت بھی دی گئی۔ ڈاکٹر عائشہ علی کو گزشتہ ماہ 12 جنوری کو تقررنامہ جاری ہوا تو ساتھ ہی وہ لندن چلی گئیں تھیں۔ صوبائی وزیر کی صاحبزادی کیلئے دو یونیورسٹیوں میں نئے شعبہ جات قائم ہوئے اور دونوں یونیورسٹیوں میں حیران کن طور پر ڈاکٹر یاسمین راشد کی صاحبزادی ہی اہلیت کے معیار پر پوری اترسکیں۔