افغان سفیر کی بیٹی کے مبینہ اغوا کیس کا ڈراپ سین ہو گیا

افغان سفیر کی بیٹی کے مبینہ اغوا کیس کا ڈراپ سین ہو گیا

ویب ڈیسک:افغان سفیر کی بیٹی کے مبینہ اغوا کیس کا ڈراپ سین ہو گیا، پولیس نے تحقیقات مکمل کرلیں۔ جس کے مطابق لڑکی نے اغوا کا جھوٹا ڈرامہ رچایا اور جھوٹ بول کر پولیس اور تحقیقاتی اداروں کو گمراہ کیا، پولیس کے مطابق لڑکی پر جھوٹ بولنےاورپاکستان کو بدنام کرنے کا مقدمہ درج کیا جائے گا۔

اسلام آباد پولیس نے افغان سفیر کی بیٹی کے اغواء کےکیس کی تحقیقات مکمل کرلیں۔ابتدائی رپورٹ میں اغواء کو جھوٹا ڈرامہ قرار دیدیا گیا، یہ بھی واضح ہو گیا کہ لڑکی نے جھوٹ بول کر پولیس اور تحقیقاتی اداروں کو گمراہ کیا۔

پولیس نے چار ٹیکسی ڈرائیورز، دکاندار، جوس اور آئس کریم والے سمیت 11 مختلف گواہوں کے بیانات قلمبند کرلئے۔ گواہوں کے بیانات ۔سیف سٹی اور سی سی ٹی وی فوٹیجز کے مطابق لڑکی سلسلہ خیل اپنی مرضی سےآزادانہ گھومتی پھرتی دکھائی دیتی ہے۔

پولیس نے حراست میں لئے گئے چاروں ٹیکسی ڈرائیورز کو بیانات اور تحقیقات کے بعد رہا کردیا۔افغان سفیر کی بیٹی سلسلہ خیل کا موبائل فون فرانزک کے لئے ایف ائی اے کے پاس بھجوایا گیا ہے ۔ پولیس کے مطابق افغانی سفیر اوران کی بیٹی نے تحقیقات میں تعاون نہیں کیا۔ جب انہیں تحقیقات کے لئے بلایا گیا تو وہ بغیر بتائے ملک چھوڑ چکے تھے۔

دوسری جانب پولیس کا یہ بھی کہنا ہے کہ لڑکی پر جھوٹ بولنے، غلط بیانی کرنے اورپاکستان کی بدنامی کا باعث بننے پر مقدمہ بھی درج ہوسکتا ہے۔