چڑیا گھر: زو بیوٹیفکیشن پراجیکٹ 2ماہ قبل مکمل، ملبہ تاحال نہ اٹھایا گیا

چڑیا گھر: زو بیوٹیفکیشن پراجیکٹ 2ماہ قبل مکمل، ملبہ تاحال نہ اٹھایا گیا


 فضہ عمران:ترقیاتی کام مکمل ہوئے2ماہ گزرگئے،ملبہ نہ اٹھایاجاسکا۔ سیاحوں کے لئے مشکلات۔ لاہور چڑیا گھر جیسی معروف تفریح گاہ مسائلستان بن گئی۔

تفصیلات کے مطابق مٹی اور ریت کے ڈھیر۔ اینٹوں کا ملبہ،جگہ جگہ کیچڑ  اور بھاری مشینری۔ یہ صورتحال لاہور چڑیا گھر کی ہے جہاں زو بیوٹیفکیشن پراجیکٹ ختم ہوئے دو ماہ سے زائد کا عرصہ گزر چکا ہے لیکن ملبہ اوربچ جانیوالی اینٹیں  نہ اٹھائی جاسکیں۔

 بچ جانےوالاملبہ راہداریوں میں پڑاہے۔ ڈھلوان کےباوجود راہداریوں پرپانی جمع ہونے کے باعث گزرنے میں مشکلات کا سامنا ہے۔ سیاح شکوہ کناں ہیں کہ اتنے بڑے چڑیا گھر میں انتظامات نہایت ناقص ہیں۔

چڑیا گھر کی بدستور بدتر ہوتی صورتحال پر جب انتظامیہ سے رابطہ کیا گیا تو دفتر پر پڑے تالے نے انتظامیہ کی لاہور چڑیا گھر میں دلچسپی کا پول کھول دیا۔