ہیکرز نے لنکڈ ان کے کروڑوں صارفین کو مشکل میں ڈال دیا

social media user accounts hacked
LinkedIn

ویب ڈیسک: سوشل میڈیا کا استعمال آج کے دور میں کافی بڑھ گیا ہے، سوشل میڈیا یا سوشل نیٹ ورکنگ سائٹس جیسے فیس بک، ٹویٹر، یوٹیوب، لنکڈ ان اور انسٹاگرام ایسے پلیٹ فارم ہیں جہاں آپ عوامی طور پر اشتراک کرنے کے لئے معلومات اور تصاویر شائع کرتے ہیں۔ 

سماجی رابطے کیلئے مختلف سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کے استعمال میں تیزی سے اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ صارفین اپنی فوٹو، ویڈیوز اور اپنی زندگی کی بہت سی سرگرمیاں شیئر کرتے رہتے ہیں۔ انہیں سوشل ایپلی کیشنز میں لنکڈ ان بھی کافی مقبول ہے۔ اس سائٹ پر صارفین اپنی پروفائل بناتے ہیں جس میں ان کی ذاتی معلومات درج کی جاتی ہیں۔ ایپلی کیشن کے ذریعے مختلف کمپنیز صارفین کو جاب کے مواقع فراہم کرتی ہیں۔ لیکن اب لنکڈ ان کے صارفین بھی دیگر سوشل میڈیا ایپس کی طرح ہیکرز کے ہاتھوں غیر محفوظ ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق فیس بک کے بعد اب مایئکرو سافٹ کی زیر ملکیت لنکڈ ان کے 50 کروڑ صارفین کا ڈیٹا فروخت کے لئے پیش کردیا گیا ہے۔ فروخت کے لیے پیش کیے گئے ڈیٹا میں لنکڈ اِن آئی ڈی، پورا نام، ای میل، فون نمبر، جنس، لنکڈ اِن پروفائل کے لنک، سوشل میڈیا پروفائل کے لنک، پیشہ ور عہدہ اور ان کے کام سے متعلق معلومات شامل ہیں۔

میڈیا رپورٹس میں انکشاف کیا گیا ہے کہ مشہور ہیکرز فورم نے لیک ہونے والے ڈیٹا کو مبینہ طور پر آن لائن فروخت کے لئے پیش کیا ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ لیک ہوئی چار فائلوں میں لنکڈ اِن صارفین کے بارے میں ان کا پورا نام، ای میل پتہ، فون نمبر، کام کی جگہ سمیت کئی معلومات اسکریپ کی گئی ہیں۔

دوسری جانب لنکڈ ان انتظامیہ کا کہنا ہے کہ اس بارے میں ہم نے تحیقات کی ہیں اور پتہ چلا ہے کہ جو ڈیٹا فروخت کیلئے پیش کیا گیا ہے وہ لیک ڈیٹا نہیں تھا۔ کپمنی کا مزید کہنا ہے کہ ہم جتنا تجزیہ کرسکتے تھے کیا اور سے اس سے معلوم ہوا ہے کہ لکنڈ ان کے کسی بھی یوزر کا ڈیٹا لیک نہیں ہوا ہے۔