جعلی شناختی کارڈز، ویکسینشن کارڈز بنانے والوں کی شامت

Action against the makers of fake identity cards and vaccination cards
Sheikh Rasheed

ویب ڈیسک : وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ جعلی شناختی کارڈز کی شکایات پر 136 نادرا افسران کو معطل کیا گیا ہے جبکہ 90 کے خلاف انکوائری جاری ہے۔ جعلی ویکسینیشن سرٹیفکیٹس بنانے والوں کے خلاف بھی کارروائی کی جائے گی۔

 رپورٹ کےمطابق  اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ نادرا کے 300 کے قریب اہلکاروں کو چارج شیٹ بھی دی جا رہی ہے۔شناختی کارڈ کے لیے نئی پالیسی لائی جا رہی ہے کیونکہ ایسی شکایات موجود ہیں کہ ایک شخص نے کئی جگہ انگوٹھے لگائے اور لوگوں کے پاس ایک سے زائد شناختی کارڈ بھی موجود ہیں۔

 انہوں نے بتایا کہ ارجنٹ پاسپورٹ  ایک روز میں  فراہم کریں گےتاہم اس کی فیس 10 ہزار روپے ہو گی۔ شیخ رشید کا یہ بھی کہنا تھا کہ افغانستان کے لیے آن لائن ویزہ شروع کیا جا رہا ہے جس کا اجرا تین ہفتے بعد شروع ہوگا۔شیخ رشید نے طالبان کی آمد پر افغانستان سے آنے والے لوگوں کی تعداد بتاتے ہوئے کہا کہ ’15 اگست سے اب تک 20 ہزار افراد پاکستان آئے، جبکہ چھ ہزار افغانستان گئے.ان کا کہنا تھا کہ سوائے انڈیا اور صومالیہ کے دیگر ممالک سے تبلیغی اجتماع کے لیے آنے والوں کو سہولت دی جائے گی۔

پنڈورا پیپرز کے حوالے سے پوچھے گئے سوال پر شیخ رشید کا کہنا تھا کہ کچھ نہیں اس میں سے، ٹائیں ٹائیں فش ہو گیا۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم اعلان کے تحقیقات کے اعلان نے سب کے منہ بند کر دیے ہیں۔ٹی ٹی پی کے ساتھ مذاکرات کے بارے پوچھے گئے سوال پر شیخ رشید کا کہنا تھا کہ یہ معاملہ ان کے نوٹس میں نہیں ہے اور نہ ہی اس کے نتیجے کے بارے میں کچھ کہہ سکتے ہیں۔ انہوں نےشکرپڑیاں میں نئی فوڈ سٹریٹ بنانے کا بھی اعلان کیا۔