پاک فوج کی مہارت اور قیادت کا معیار کسی بھی جدید فوج سے بہتر ہے، جنرل عاصم منیر

Stay tuned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

سٹی42: کثیرالملکی سپیشل فورسز کی مشترکہ مشق دائمی بھائی چارہ-2 (Eternal Brotherhood -II) کی افتتاحی تقریب  بروتھا میں منعقد ہوئی۔ دو ہفتوں پر مشتمل مشترکہ مشق میں پاکستان، قازقستان، قطر، ترکیہ اور ازبکستان کی سپیشل فورسز حصہ لے رہی ہیں.

مشترکہ فوجی مشقوں کے جائزہ کے لئے چیف آف آرمی سٹاف جنرل سید عاصم منیر  نشانِ امتیاز (ملٹری) نے بروتھا گیریژن کا دورہ کیا۔

اس موقع پر آرمی چیف کو جنرل آفیسر کمانڈنگ سپیشل سروسز گروپ کی جانب سے مشق کے حوالے سے بریفنگ دی گئی ۔ اس فوجی مشق کا مقصد دوست ممالک کی افواج کے درمیان تاریخی  برادرانہ تعلقات کو مزید بڑھانا ہے۔

مشق کا مقصد مستقبل کے فوجی تعاون کو بڑھانا اور ایک دوسرے کے تجربات سے مستفید ہو کردہشتگردی کے خلاف نبرد آزما ہونا ہے۔

چیف آف آرمی سٹاف نے جونیئر لیڈر شپ اکیڈمی (شنکیاری) کا دورہ بھی کیا۔

اکیڈمی میں جونئیر لیڈرز سے

خطاب کرتے ہوئے چیف آف آرمی سٹاف جنرل سید عاصم منیر نے کہا، ”جونیئر لیڈرز پاکستان آرمی کی ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں اور روایتی اور غیر روایتی جنگ میں کامیابی سے کلیدی کردار ادا کر رہے ہیں۔پاک فوج کی پیشہ ورانہ مہارت اور قیادت کا معیار دنیا کی کسی بھی جدید فوج کے مقابلے میں بہترین ہے۔”پاک فوج کے جونیئرلیڈرز نے دنیا بھر میں تربیت، آپریشنز اور عالمی معیار کے مقابلوں کے شعبوں میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا ہے۔“

شنکیاری اور بروتھا آمد پر انسپکٹر جنرل ٹریننگ اینڈ ایویلیوایشن نے آرمی چیف کا استقبال کیا.