بجلی کے بلوں پر کوارٹر ٹیرف ایڈجسٹمنٹ سرچارج  ہائی کورٹ میں چیلنج

بجلی کے بلوں پر کوارٹر ٹیرف ایڈجسٹمنٹ سرچارج  ہائی کورٹ میں چیلنج

 یاور ذوالفقار: چودھری شوگر ملزانتظامیہ نے طب جلی کے بل میں کوارٹر ٹیرف ایڈجسٹمنٹ بقایا جات کی وصولی کو لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج کردیا۔

درخواست میں چوہدری شوگر مل نے وزارت پانی و بجلی، کامرس، واپڈا اور لیسکو کو فریق بناتے ہوئےموقف اختیار کیا ہےکہ لیسکو نے بجلی کےبلوں میں کوارٹر ٹیرف ایڈجسٹمنٹ کےنام پر بقایاجات بھی وصول کرنا شروع کر دیئے ہیں۔

چودھری شوگر ملز کی پروڈکشن کا انحصار بجلی پر ہے، درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہےکہ بجلی کا بل بڑھنے سے پروڈکشن کے اخراجات بھی بڑھ جاتے ہیں، نیپرا کی جانب سے کوارٹر ٹیرف ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بقایاجات کی وصولی ملزکی بندش کا باعث بن سکتی ہے۔

درخواست میں قانونی نقطہ اٹھایا گیا کہ لیسکوکی جانب سے اضافی بلوں کی وصولی آئین کی خلاف ورزی ہے، درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ بجلی بلوں میں کوارٹر ٹیرف ایڈجسٹمنٹ بقایاجات کی وصولی کوغیر قانونی قرار دے کر کالعدم کیا جائے۔