ڈینگی کے سینکڑوں مریضوں کی تشخیص نہ ہونے کا انکشاف

ڈینگی کے سینکڑوں مریضوں کی تشخیص نہ ہونے کا انکشاف

( زاہد چوہدری ) ڈینگی بخار کی تشخیص کے حوالے سے محکمہ صحت کے اقدامات کا پول کھل گیا، شہر کی بیشتر ڈسپنسریوں اور ڈائیگناسٹک سینٹرز پر ڈینگی کی تشخیصی سہولیات میسر نہ ہونے سے سینکڑوں مریض بے یارومددگار ، حکومت کو ہوش نہ آیا۔

ڈینگی بخار کی تشخیص کے حوالے سے شہر کے بیشتر سرکاری ڈائیگناسکٹ سنٹرز اور ڈسپنسریوں میں ڈینگی کی تشخیص کیلئے سی بی سی جیسے بنیادی ٹیسٹوں کی سہولت ہی میسر نہیں۔ لٹن روڈ، سمن آباد، رحمانپورہ اور شادمان سمیت بیشتر ڈسپنسریوں میں موجود کیمسٹری اینلائزر مشینیں یا تو خراب ہیں یا ان پر ٹیسٹ کرنے کیلئے کیمیکل دستیاب نہیں ہے۔

ڈائیگناسٹک سنٹرز اور ڈسپنسریوں پر تشخیصی سہولت نہ ہونے کی وجہ سے ڈینگی کی علامات کے ساتھ ان مراکز صحت پر آنے والے سینکڑوں مریضوں میں مرض کی تشخیص ہی نہیں ہورہی اور اس سنگین صورتحال کے باعث شہر میں ڈینگی بخار کے مریضوں کی اصل تعداد بھی تاحال سامنے نہیں آرہی ہے۔

محکمہ صحت اور ضلعی انتظامیہ کی روزانہ ڈینگی پر متعدد میٹنگز بھی صرف زبانی جمع خرچ تک محدود ہیں اور اصل صورتحال یہ ہے کہ مریضوں کی تشخیص کی بنیادی سہولت بھی سرکاری مراکز صحت پر دستیاب نہیں ہے۔