پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مزید بڑےاضافے کی تیاری، اطلاق کب ہوگا؟

petrol new price in Pakistan
کیپشن: petrol price in Pakistan
سورس: google
Stay tuned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

(ویب ڈیسک) پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ایک بار پھر بڑا اضافہ ہونے کا امکان ہے، حکومت کی طرف سے آئی ایم ایف کو بھیجے گئے لیٹرآف انٹینٹ کے ضمن میں پیٹرولیم مصنوعات پر  زرعی شعبے کی ٹیکس چھوٹ ختم اور   سیلز ٹیکس عائد ہونے کی توقع ہے۔

حکومت پاکستان کی طرف سےآئی ایم ایف کو  ارسال کئے گئے لیٹرآف انٹینٹ کے مطابق اکتوبر سے پیٹرولیم مصنوعات پر 10.5 فیصد سیلز ٹیکس عائد کیا جائے گا جس کے تحت سیلز ٹیکس سے فی لیٹر قیمت میں 20 روپے تک اضافےکا امکان ہے،ٹیکس اہداف میں کمی ہوئی تو زرعی شعبے کی سیلز ٹیکس چھوٹ ختم کر دی جائیں گی جبکہ آئی ایم ایف کو یقین دہانی کرائی گئی ہے کہ زرعی ادویات، کھاد اور ٹریکٹرز پر سیلز ٹیکس چھوٹ ختم کر دی جائے گی۔

لیٹرآف انٹینٹ کے مطابق زرعی شعبے پر ٹیکس چھوٹ ختم کرنے سے 150 ارب روپے کا ریونیو مل سکےگا۔ٹیئر1 اور ٹیئر 2 کے سگریٹس پر بھی مزید اضافی ٹیکسز لگا دیے جائیں گے، شوگر ڈرنکس پر ٹیکسز عائد کر کے 60 ارب روپے تک کا ریونیو لیے جانے کا امکان ہے،رواں مالی سال پہلی سہ ماہی میں اہداف حاصل نہ ہوئے تو اکتوبر سے اقدامات ہوں گے۔

واضح رہے کہ حکومت نے ماہانہ 200 یونٹ استعمال کرنے والے صارفین پرفیول ایڈجسٹمنٹ چارجز ختم کردیے۔مجموعی طور پر ایک کروڑ 70  لاکھ صارفین کیلئے فیول ایڈجسٹمنٹ چارجز ختم کیے گئے ہیں، ایف اے سی کی مد میں 22 ارب روپے کا ریلیف صارفین کو دیا ہے۔تاجروں پر فکسڈ ٹیکس بھی ختم کردیا گیا ہے، اب پرانے طریقہ کار پر ہی ٹیکس وصول کیا جائے گا۔