پنجاب فوڈ اتھارٹی نے  بڑی منرل واٹر کمپنیوں کا پانی مضر صحت قرار دے دیا

پنجاب فوڈ اتھارٹی نے  بڑی منرل واٹر کمپنیوں کا پانی مضر صحت قرار دے دیا

عمران یونس: غیر معیاری پانی، پنجاب فوڈ اتھارٹی نے 4 بڑی منرل واٹر کمپنیوں کا پانی مضر صحت قرار دے دیا۔ ایوائن  نیچرل واٹر، مری سپارکلیٹس پریمیئم ، داسانی اور سپرنگلے نیچرل واٹر کے نمونے فیل قرار دے دیئے گئے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب فوڈ اتھارٹی نے واٹر سیمپلنگ مہم کے دوسرے مرحلے میں فلٹریشن پلانٹس کے بعد بڑے برانڈز کے پانی کا تجزیہ مکمل کرلیا، فوڈ اتھارٹی ٹیموں نے 11 کمپنیوں کے مختلف برانڈز کے سیملز لیے اور معیار میں کمی، غلط لیبلنگ پر 4 برانڈز فیل قرار دے دیئے ہیں۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی قوانین کی خلاف ورزی پر ایوائن نیچرل واٹر، مری سپارکلیٹس پریمئم، داسانی اور سپرنگلے نیچرل واٹر کے سیمپل فیل ہوئے۔، لیبلنگ پر ایک جبکہ کوالٹی  پر 3 برانڈز فیل قرار پائے۔

ڈی جی فوڈ اتھارٹی کے مطابق داسانی کے پانی میں تلچھٹ اور گندگی پائی گئی، ایوائن نیچرل اور سپرنگلے کے پانی میں ٹی ڈی ایس کا لیول کم پایا گیا، مری سپارکل لٹ پانی لیبل رول 8 (2) اور بیج نمبر درج نہ ہونے پر فیل قرار پایا۔ فیل ہونے والے سیمپلز کی پروڈکشن تا دم اصلاح بند کر دی گئی ہے، تصحیح کرنے والے پلانٹس کے دوبارہ سیمپل لے کر تجزیے کے لیے  لیبارٹری بھجوائے جائیں گے، ڈی جی فوڈ اتھارٹی کے مطابق اصلاح کا عمل مکمل اور دوبارہ سیمپل پاس ہونے تک فیل شدہ برانڈزکو سپلائی کی اجازت نہیں ہو گی۔

پاس اور فیل ہونے والے برانڈز کی مکمل فہرست پنجاب فوڈ اتھارٹی ویب سائٹ پر اپ لوڈ کر دی گئی ہے، تمام قسم کے پانی کا سال میں 4 دفعہ تجزیہ کر کے نتائج جاری کیے جائیں گے۔

شازیہ بشیر

Content Writer