متحدہ عرب امارات میں ملازم  پاکستا نیوں  کے لئے خوشخبری

immigrant worker dubai
کیپشن: immigrant worker
سورس: google
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

  ویب ڈیسک : متحدہ عرب ا مارت میں ملازمین کے لئے خوشخبری ۔ گھرسے نکلتے ہی ڈیوٹی کے اوقات شروع ۔ دفتر یا فیکٹری پہنچنے کا وقت بھی اوقات کار میں شمار ہوگا۔ حکومت نے نئے لیبر لاز میں وضاحت کردی ۔

 رپورٹ کے مطابق کابینہ کی قرارداد نمبر (1) 2022 میں بیان  کردہ وضاحت کے بعد  وزارت محنت نے نیا نوٹی فیکیشن جاری کردیا ہے

 رپورٹ کے مطابق  کارکن کی طرف سے اپنی رہائش گاہ اور کام کی جگہ کے درمیان سفر کرنے کے دوران گزارے گئے  وقت کو کام کے اوقات میں شمار کیا جائے گا۔

کام پر جانے کا سفر کام کے اوقات میں کب شمار ہوتا ہے؟

آرٹیکل 15 کی پہلی شق یہ بتاتی ہے کہ کارکن کی طرف سے اپنی رہائش گاہ اور کام کی جگہ کے درمیان سفر کرنے کے دوران گزارے گئے وقفوں کو بعض معاملات میں کام کے اوقات میں شمار کیا جائے گا۔

2021 کے وفاقی قانون نمبر 33 کا آرٹیکل 17 (3) یہ بتاتا ہے کہ ملازم کی رہائش گاہ اور دفتر کے درمیان سفر کے وقت کو کام کے اوقات کے مقصد کے لیے شمار نہیں  کرتا تاہم اس کی کچھ مستثنیات ہیں 

ملازم کی رہائش اور دفتر کے درمیان سفر کا وقت درج ذیل صورتوں میں کام کے اوقات میں شمار کیا جائے گا، 

1. خراب موسم اور نیشنل سینٹر آف میٹرولوجی کے اعلانات کے دوران رہائش اور دفتر کے درمیان سفر کرنے میں گزارا گیا وقت۔ مثلاً بارشیں، ریت کے طوفان، سیلاب وغیرہ۔

2. ٹریفک حادثات یا کار کی ہنگامی خرابی کے دوران کمپنی کی طرف سے فراہم کردہ ٹرانسپورٹ میں ملازم کی طرف سے گزارا گیا وقت۔ 

اس کا اطلاق اس وقت ہوتا ہے جب آجر ملازمین کے لیے سفری انتظامات فراہم کرتا ہے اور مذکورہ سفر ٹریفک یا گاڑی  کی خرابی سے متاثر ہوتا ہے۔ اس صورت میں، ٹریفک میں گزارا ہوا وقت یا خرابی کو دور کرنے میں ملازم کے روزانہ کام کے اوقات میں شمار کیا جائے گا۔

تاہم قانونی ماہرین کاکہنا ہے کہ  اگر کسی ملازم اور آجر کے درمیان ان کے سفر کے وقت کے حوالے سے کوئی معاہدہ نہیں ہے تو اس میں کوئی رعایت نہیں ہوگی۔