ڈیفنس؛ انٹرمیڈیٹ کی طالبہ نے خودکشی کرلی

(عابد چودھری)لاہور کے علاقے ڈیفنس فیز 4 میں طالبہ کی مبینہ طورپر خودکشی کا واقعہ،امتحانات میں کم نمبر آنے 21 سالہ نیہا نے دلبرداشتہ ہو کرگلے میں پھندا ڈال کر خودکشی کر لی۔

خودکشی کے بڑھتے ہوئے رجحان نے شہر میں خوف و ہراس کی فضا طاری کردی ہے، ہر روز کوئی نہ کوئی شخص اپنے ہاتھوں سے موت کو گلے لگا لیتا ہے،خودکشی کا ایک اور افسوس ناک واقعہ لاہور میں ڈیفنس فیز 4  میں پیش آیا جہاں 21 سالہ طالبہ نے اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا، واقعہ کی اطلاع ملنے پر پولیس جائے وقوعہ پر پہنچی۔

پولیس کا کہناتھا کہ اکیس سالہ نیہا نے گلے میں پھندا ڈالکر خودکشی کی،امتحانات میں کم نمبر آنے پر دلبرداشتہ ہو کر نیہا نے خودکشی کی،پولیس نے نیہا کی لاش قبضہ میں لیکر پوسٹ مارٹم کے لئے مردہ خانے منتقل کر دی،۔

اطلاعات کے مطابق اکیس سالہ نیہا چند روز قبل ڈینگی کا بھی شکار ہوئی تھی،طالبہ ذہنی دباؤ کا شکار تھی،ورثاء نے پولیس کو بیان دیا کہ وہ کوئی کارروائی نہیں کرانا چاہتے۔

واضح رہے کہ خودکشی کی وجوہات گھریلو جھگڑے، عشق میں ناکامی، محبوب کا ناراض ہوجانا اور  ذہنی تناؤ ہے، زیادہ تر واقعات ذاتی و گھریلو مسائل کہ وجہ سے رونما ہوتے ہیں, خودکشی کرنے والوں میں پڑھے لکھے نوجوانوں کی اکثریت شامل ہے۔

 ماہرین کا کہنا ہے کہ خودکشی کی وجوہات گھریلو جھگڑے، جہالت اور ذہنی تناؤ ہے۔ زیادہ تر واقعات ذاتی و گھریلو مسائل کہ وجہ سے رونما ہوتے ہیں،انسان کے ذہن میں خود کشی کرنے کا خیال صرف چند لمحوں کیلئے آتا ہے، اگر ان چند لمحوں پر قابو پا لیا جائے تو خودکشی کے بڑھتے رجحانات سے بچا جاسکتا ہے۔