غیر قانونی اسلحہ کی فروخت روکنے کیلئے محکمہ داخلہ کا بڑا اقدام

غیر قانونی اسلحہ کی فروخت روکنے کیلئے محکمہ داخلہ کا بڑا اقدام
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

 (عثمان علیم) غیر قانونی طور پر اسلحہ کی فروخت روکنے کے لیے محکمہ داخلہ کا کمپیوٹرائزڈ سسٹم متعارف کروانے کا فیصلہ، پائلٹ پراجیکٹ بطور ٹیسٹ رن لاہور سمیت چند اضلاع سے شروع کیا جائے گا۔

 ذرائع کے مطابق لاہور سمیت پنجاب کے چند اضلاع میں ابتدائی طور پر پائلٹ پراجیکٹ شروع کیا جائے گا، ہر اسلحہ ڈیلرز کی دکان پر کمپیوٹرائزڈ سسٹم نصب کروائے جائیں گے جس کا سرور محکمہ داخلہ میں ہوگا، نظام کمپیوٹرائزڈ ہونے سے کوئی بھی اسلحہ ڈیلر بغیر لائسنس والے افراد کو اسلحہ فروخت نہیں کر سکے گا، ڈیلرز اسلحہ کی فروخت کرتے وقت کمپیوٹر میں ایک بھی گولی خریدنے والے لائسنس نمبر اور فروخت شدہ اسلحے کا اندراج لازمی کرے گا، ہر ڈیلر کے پاس موجود اسلحہ کی تعداد کا مکمل ریکارڈ ڈی سیز کے پاس موجود ہے جس کا آڈٹ کیا جاتا ہے، جو بھی ڈیلر بغیر انٹری کیے اسلحہ کی فروخت کرے گا، آڈٹ میں پکڑا جائے گا۔

  پائلٹ پراجیکٹ کے کامیاب ٹیسٹ رن کے بعد کمپیوٹرائزڈ نظام کو وسیع کرتے ہوئے تمام اسلحہ ڈیلرز کی دکانوں اور اضلاع تک بڑھا دیا جائے گا، پنجاب بھر میں مجموعی طور پر 700 کے قریب اسلحہ ڈیلرز کے پاس لائسنس موجود ہیں، اب تک 90 فیصد اسلحہ ڈیلرز کے لائسنس کمپیوٹرائزڈ کیے جا چکے ہیں، جو ڈیلرز اپنا اسلحہ لائسنس کمپیوٹرائزڈ نہیں کروا رہے ان میں متعدد کے لائسنس بلاک کیے جا چکے ہیں۔