عمران اور پاکستان ساتھ نہیں چل سکتے:بلاول بھٹو

عمران اور پاکستان ساتھ نہیں چل سکتے:بلاول بھٹو

سٹی 42: پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ یہ بات صاف ظاہر ہو چکی ہے کہ پاکستان اور عمران خان ساتھ نہیں چل سکتے۔ 

بلاول بھٹو زرداری نے بلاول ہاؤس لاہور میں پی پی جنوبی پنجاب کے رہنماؤں سے ویڈیو لنک کے ذریعے ملاقات کی اور اجلاس کی صدارت بھی کی جس میں پی آئی اے کی سی بی اے یونین کے عہدے داروں نے شرکت کی۔ 

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نااہل حکومت کو ہر فورم پر بے نقاب کریں گے، 2 سالوں میں عمران خان نے سوائے الزام تراشیوں کے اورکچھ نہیں کیا، عمران خان عوام کے لیے ناقابل برداشت ہوچکے ہیں۔سیکشن 29 کے خاتمے کے لیے سول ایوی ایشن یونین کے ساتھ ہیں، ائیرپورٹس کو سیکیورٹی ادارے بھی استعمال کرتے ہیں، ائیرپورٹس کی فروخت ملک میں سیکیورٹی کو داؤپر لگادے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ وقت آچکا ہےکہ ملک بھرکے مزدور اور ورکرز عمران خان کی فاشسٹ حکومت کے خلاف متحدہوں، حکومت نے اپنی نااہلی کی وجہ سے پی آئی اےکی پروازوں پر عالمی پابندی لگوادی۔ 

بلاول بھٹو زرداری نے مزید کہا کہ پاکستان کے اثاثے قوم کی ملکیت ہیں اورقوم اپنی ملکیت کا تحفظ کرےگی، عمران خان کا مقصد صرف اپنےکاروباری دوستوں کےمفادات کا تحفظ ہے، پیپلزپارٹی اقتدار میں آکر ریاستی اداروں کے مزدوروں کو دوبارہ شیئرز دے گی، ریاست کے اداروں کو خریدنے والے خبردار رہیں، پیپلزپارٹی اقتدارمیں آکر فروخت کے فیصلوں کو کالعدم قرار دے گی۔

یاد رہے بلاول بھٹو ان دنوں لاہور میں ہیں،وہ پنجاب میں پیپلزپارٹی کو دوبارہ سے زندہ کرنے کیلئے کوشاں ہیں،اسی سلسلہ میں پنجاب کی پارٹی قیادت سے ملاقاتیں کی جارہی ہیں،نئے ٹاسک سونپے جارہے ہیں،حکومت کیخلاف جارحانہ پالیسی بھی اسی حکمت عملی کا حصہ ہے۔مستقبل قریب میں پیپلزپارٹی کے زیر انتظام اے پی سی بھی بلائی جانے کا امکان ہے۔