سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے سالانہ انتخابات کل ہونگے

سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے سالانہ انتخابات کل ہونگے

ملک اشرف: سپریم کورٹ بار کے سالانہ انتخابات کل ہوں گے، انتظامات مکمل، لاہور کے 1291 وکلاء کے لیے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں پولنگ سٹیشن قائم، صبح 9 بجے سے شام 5 بجے تک پولنگ ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ بار کے الیکشن میں پرو فیشنل گروپ اور انڈیپینڈنٹ گروپ کے امیدوار ایک دوسرے کے مد مقابل ہوں گے، صدارت کے عہدے کے لیے پروفیشنل گروپ سے امان اللہ کنرانی اورانڈیپینڈنٹ گروپ سے علی احمد کرد کے درمیان مقابلہ ہو گا، دونوں صدارتی امیدواروں کا تعلق بلوچستان سے ہے، پولنگ کے دوران دن 1 سے 2 بجے تک نماز اور کھانے کا وقفہ ہوگا، ملک بھر سے 3047 ووٹرز وکلاء اپنا حق رائے استعمال کریں گے۔

سپریم کورٹ لاہور رجسٹری اور ہائیکورٹ کے باہر سڑکیں امیدواروں کے انتخابی بینرز سے سج گئیں، الیکشن کے روز جی پی او چوک سے اے جی آفس جانے والی سڑک عام ٹریفک کے لیے بند رہے گی، تمام امیدواروں کی الیکشن سرگرمیوں کا مرکز لاہور بنا رہا، دیگر صوبوں کی نسبت پنجاب سے تعلق رکھنے والے ممبران کی تعداد سب سے زیادہ 2067 ہے۔

سپریم کورٹ بار الیکشن میں سب سے زیادہ ووٹرز وکلاء کی تعداد لاہور سے ہے، سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں وائس چئیرمین بار کونسل پرائزنڈنگ آفیسر کے فرائض سرانجام دیں گے، سپریم بار کے صدر، نائب صدر اور سیکرٹری کے تین اہم عہدوں کےلیے 6 امیدوار مد مقابل ہوں گے، نائب صدر پنجاب کے لیے ملک کرامت اعوان اور سید طیب محمود جعفری کے درمیان مقابلہ ہوگا۔

سپریم کورٹ بار کے سیکرٹری کے لئے پروفیشنل گروپ سے شمیم الرحمان ملک اور انڈیپینڈنٹ گروپ کی طرف سے عظمت اللہ چوہدری امیدوار ہیں۔