لاہور ہائیکورٹ: پنجاب کی غیرقانونی ہاؤسنگ اسکیموں کو لیگلائز کرنے کا حکم

لاہور ہائیکورٹ: پنجاب کی غیرقانونی ہاؤسنگ اسکیموں کو لیگلائز کرنے کا حکم

ملک اشرف: لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس علی اکبر نے سماعت کے دوران صوبے بھر کی غیر قانونی ہاؤسنگ اسکیموں کو لیگلائز کرنے کا حکم دیا ہے۔

لاہور ہائیکورٹ میں شہری کی جانب سے ایک درخواست دائر کی گئی تھی جس میں مؤقف اپنایا گیا تھا کہ لاہور ڈیولپمنٹ اتھارٹی قواعد و ضوابط پورے کرنے والی ہاؤسنگ سوسائٹیز کو قانونی قرار دے۔لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس علی اکبر نے سماعت کے دوران صوبے بھر کی غیر قانونی ہاؤسنگ اسکیموں کو لیگلائز کرنے کا حکم دیا ہے۔

جسٹس علی اکبر نے ریمارکس دیئے کہ ہاؤسنگ سوسائٹیز کو مسمار کرنے کے بجائے انہیں قانونی حیثیت دیں اور پنجاب بھر کی ہاؤسنگ سوسائٹیز کو ایک ماہ میں لیگل کیا جائے۔جسٹس علی اکبر قریشی نے حکم دیا کہ تمام ہاؤسنگ سوسائٹیز کو قانونی شکل دینے کیلئے کمیٹی تشکیل دی جائے اور عدالتی حکم پر عمل درآمد سے متعلق ہر ہفتے رپورٹ پیش کی جائے۔اس موقع پر چیف سیکریٹری پنجاب کا کہنا تھا کہ عدالتی حکم پر من و عن عمل ہوگا جب کہ ڈی جی ایل ڈی اے نے کہا کہ تمام ہاؤسنگ سوساٹیز کے مالکان سے مل کر قواعد ضوابط بنائیں گے۔