سرکاری اجازت کے بغیر 4 وائس چانسلرز کی وی سی پنجاب یونیورسٹی کیلئے انٹرویوز میں شرکت

سرکاری اجازت کے بغیر 4 وائس چانسلرز کی وی سی پنجاب یونیورسٹی کیلئے انٹرویوز میں شرکت


اکمل سومرو: سرکاری اجازت کے بغیر 4 وائس چانسلرز کی وی سی پنجاب یونیورسٹی کیلئے انٹرویوز میں شرکت، محکمہ ہائر ایجوکیشن نے جامعات کے موجودہ وائس چانسلرز کو این او سی بھی جاری نہیں کیا لیکن جامعہ پنجاب میں وائس چانسلر کی تقرری کے لیے انٹرویوز کر لیے گئے۔

یہ بھی لازمی پڑھیں:نیوز بلیٹن 3بجے 14 نومبر2018  

سٹی 42 ذرائع کے مطابق پنجاب یونیورسٹی میں مستقل وائس چانسلر کی تقرری کے لیے سرچ کمیٹی کی جانب سے پہلے روز ارفع کریم ٹاور میں اُمیدواروں کے انٹرویوز لیے گئے۔ سرکاری جامعات کے پروفیسرز کو سرکاری اجازت کے ساتھ اس عہدے کے لیے درخواستیں جمع کرانا تھیں۔ جس کے لیے اُنہیں اپنی جامعات سے این اوسی لازمی طور پر حاصل کرنا تھا۔ چار سرکاری جامعات کے وائس چانسلرز نے محکمہ ہائر ایجوکیشن پنجاب سے این او سی حاصل کیے بغیر ہی انٹرویو دیا۔جبکہ محکمہ کی عدم توجہی کے باعث وائس چانسلرز کو این او سی دیے بغیر ہی انٹرویوز کے لیے شارٹ لسٹ کر لیا گیا۔

یہ بھی لازمی دیکھیں:

واضح رہے کہ یو ای ٹی لاہور کے وائس چانسلر ڈاکٹر فضل احمد خالد، یو ای ٹی ٹیکسلا کے وائس چانسلر ڈاکٹر نیاز احمد، وویمن یونیورسٹی سیالکوٹ کی وائس چانسلر ڈاکٹر فرحت سلیمی اور ایجوکیشن یونیورسٹی لاہور کے وائس چانسلر ڈاکٹر رؤف اعظم شامل ہیں۔ سرچ کمیٹی میں سیکرٹری ہائر ایجوکیشن نبیل اعوان بھی شامل ہیں تاہم این او سی حاصل کرنے کے معاملے پر محکمہ کی جانب سے غفلت کا مظاہرہ کیا گیا ہے۔