پولنگ سٹاف اور پریذائیڈنگ افسران کا نیا کارنامہ سامنے آگیا

03:57 PM, 26 Jul, 2018

(سٹی 42) الیکشن کمیشن کی جانب سے رزلٹ جمع کرنے میں مبینہ تاخیر پر پریذائیڈنگ افسران بیلٹ باکسز اور دیگر سامان سڑک کنارے لاوارث چھوڑ کر چلے گئے۔

خبر پڑھیں۔۔۔عام انتخابات 2018، لاہور میں بڑے بڑے برج اُلٹ گئے

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن کی جانب سے رزلٹ جمع کرنے میں تاخیر پر پریذائیڈنگ افسران اور تھکا ہارا پولنگ سٹاف پولنگ کا سامان الیکشن کمیشن کے آفس میں جمع کروانے کی بجائے اسے لاوارث چھوڑ کر چل دیا۔ جس کے باعث الیکشن کمیشن کی پراپرٹی سینکڑوں بیلٹ باکسز اور ووٹنگ بوتھ سیکرٹریٹ کے باہر رلنے لگے۔

یہ خبر بھی پڑھیں۔۔تحریک لبیک یارسول اللہ نے پی ٹی آئی پر دھاندلی کا الزام لگادیا

یہ بھی لازمی پڑھیں:نیوز بلیٹن3بجے 15 نومبر 2018  

ذرائع کے مطابق دور دراز علاقوں سے آئے پریذائڈنگ آفیسرز بیلٹ باکسز اور ووٹنگ بوتھز کو ملتان روڈ اور سیکرٹریٹ کے باہر لاوارث چھوڑ کر چلے گئے، الیکشن کا سامان جمع نہ ہونے سے ہزاروں پولنگ بوتھ سڑک کنارے موجود ہیں جن کی سیکیورٹی کا بھی کوئی مناسب انتظام نہیں کیا گیا۔

خبر پڑھنا مت بھولیں۔۔عام انتخابات2018 کے نتائج کی آمد کا سلسلہ جاری

پریذائیڈنگ افسران کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن کا عملہ پولنگ کا سامان جمع کرنے میں غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کر رہا ہے۔

مزیدخبریں