وزیراعظم کا کرکٹ سرگرمیوں کی اجازت دینے سے انکار

وزیراعظم کا کرکٹ سرگرمیوں کی اجازت دینے سے انکار

 ( مانیٹرنگ ڈیسک ) پاک انگلینڈ سیریز کا انعقاد خطرے میں پڑ گیا، برطانوی وزیراعظم نے کرکٹ کی سرگرمیاں بحال کرنے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا ہے ۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق برطانوی وزیر ا عظم بورس جانسن کا کہنا ہے کہ کرکٹ بال کے ذریعے بھی کرونا وائرس پھیل سکتا ہے اس لیے کرکٹ میچز کے انعقاد کی اجازت نہیں دے سکتے، انگلینڈ کرکٹ بورڈ کی جانب سے کرکٹ سرگرمیوں کو بحال کرنے کیلے حکومت سے مذاکرات جاری ہیں  برطانیہ کے وزیر اعظم بورس جانسن نے کرکٹ سرگرمیاں بحال کرنے سے منع کردیا ہے۔

برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن کا کہنا ہے کہ کرکٹ میچز کھولنے کی اجازت ابھی نہیں دے سکتے کیونکہ کرکٹ بال کے ذریعے بھی کرونا وائرس پھیل سکتا ہے۔ان کا کہنا ہے کہ کرکٹ کی بحالی میں سب سے بڑا مسئلہ کرکٹ کی گیند ہے اور یہ بات سب کیلئے سمجھنا آسان ہے کہ ایک ہی گیند سب کھلاڑیوں کے ہاتھ میں جاتی ہے جس کے باعث کرونا وائرس پھیلنے بہت زیادہ امکان ہے۔

اسی باعث انہوں نے فی الحال کرکٹ سرگرمیاں بحال کرنے کی اجازت نہیں دی۔ ان کے اس فیصلے کے باعث پاکستان کا دورہ انگلینڈ بھی منسوخ ہو سکتا ہے ۔

دوسری جانب دورہ انگلینڈ کے لیے قومی اسکواڈ میں شامل کورونا وائرس فری کرکٹرز مقامی ہوٹل پہنچ گئے، قومی کھلاڑی اورمینجمنٹ کے ممبران نجی ہوٹل کے ایک فلور میں بائیو سیکور ماحول میں رہیں گے جبکہ دوسری کوویڈ ٹیسٹنگ آج ہوگی، ہوٹل پہنچنے والوں میں 18 کھلاڑی اور مینجمنٹ کے 11 اراکین شامل ہیں ۔

کپتان بابراعظم ، امام الحق ، عثمان شنواری ، عابد علی سمیت دیگر کھلاڑیوں نے نجی ہوٹل میں رپورٹ کیا،ٹیم مینجر کا کہنا ہے کہ تمام کھلاڑی اور مینجمنٹ کے اراکین نے ہوٹل میں رپورٹ کر دی ہے، ریزرو کھلاڑیوں میں عمران بٹ، بلال آصف، محمد موسیٰ اور محمد نواز شامل ہیں۔ ٹیسٹوں کی رپورٹ کل موصول ہوگی