ہمیں اپنی آخرت کیلئے بھی سوچ بچار کرنی چاہیے: عار ف لوہار

Arif Lohar
کیپشن: Arif Lohar
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

کینال روڈ (سٹی42) نامور گلوکار عارف لوہار نے کہا ہے کہ زندگی پانی کا بلبلہ ہے، اس لئے ہمیں اپنی آخرت کیلئے بھی سوچ بچار کرنی چاہیے، کمزور رشتہ دار وں اور غریبوں کا حق مارنا اوران کی جائیدادوں پر قبضے کرنا کوئی قابل فخر کام نہیں بلکہ اس کا حساب دینا پڑے گا اور میرے رب کی گرفت بہت سخت ہے۔

 ایک انٹرویو میں  گلوکار عارف لوہار نے کہا کہ زندگی بہت عارضی ہے، اس لئے میں نے کبھی بھی بہت طویل منصوبہ بندی نہیں کی، زندگی گزارنے کیلئے جتنا ضروری ہوتا ہے، اتنی سوچ بچار کرتا ہوں اور رب کی ذات ہمارے حق میں بہتر کرتی ہے۔

 انہوں نے کہا کہ بااثر لوگ کمزورطبقات پر ظلم کرکے بڑے فخر سے ویڈیوز سوشل میڈیا پر شیئر کرتے ہیں، لیکن ایسے لوگ رب کریم کی گرفت سے بچ نہیں سکتے، غریب کی بد دعا بغیر کسی رکاوٹ کے ساتویں آسمان تک پہنچتی ہے اور میرا رب کمزور کی دعا کو سنتاہے اس لئے ظالموںکو اس کی پکڑ سے ڈرنا چاہیے اور توبہ کرنی چاہیے۔

 انہوں نے کہاکہ بہت سے لوگ اپنے یتیم رشتہ داروں کی جائیدادیں ہتھیا لیتے ہیں ایسے لوگوں کو بھی سوچنا چاہیے کہ زندگی ختم ہو جائے گی پھر ان کے بچوں نے ان جائیدادوں پر براجمان ہونا ہے اور تمہیں یاد بھی نہیں کرنا اس لئے اس طرح کا ظلم نہ کرو جس کا تمہیں حساب دینا پڑے۔