پاکستان نے ہائبرڈ جاسوسی پر بھارت کو سبق سکھانے کا فیصلہ کر لیا

پاکستان نے ہائبرڈ جاسوسی پر بھارت کو سبق سکھانے کا فیصلہ کر لیا
fawad chaudhry and Shahzad Akbar

ویب ڈیسک: وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاداکبرنے کہاہے کہ بھارت نے سائبر جاسوسی کے ذریعے پاکستان کی سلامتی پر حملہ کیا،یہ ایک سنگین معاملہ ہے اسے ایسے نہیں چھوڑا جا سکتا، پاکستان جاسوسی معاملے پربھارت کے خلاف قانونی کارروائی کرے گا۔

اسلام آباد میں وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فوادچودھری کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے شہزاداکبر نے کہا کہ بھارت نے اسرائیل کے ذریعے پیگاسس سوفٹ ویئرسے ہائبرڈ جاسوسی کی، سافٹ ویئر کے ذریعے وزیراعظم اوراعلیٰ حکام کی جاسوسی کی گئی۔ سافٹ ویئر کے ذریعے وزیراعظم اور اعلیٰ ملٹری شخصیات کو ٹارگٹ کیا گیا، یہ ایک سنگین معاملہ ہے اسے ایسے نہیں چھوڑا جا سکتا۔

معاون خصوصی برائے احتساب نے کہا کہ پاکستان جاسوسی کے معاملے پر بھارت کے خلاف ایکشن لینے جا رہا ہے، بھارت نے سائبر جاسوسی کے ذریعے پاکستان کی سلامتی پر حملہ کیا گیا، پاکستان نے پیگاسس کے ذریعے جاسوسی کی تحقیقات کا فیصلہ کرلیا ہے۔ کمیٹی میں انٹیلی جنس ادارے اور ایف آئی اے بھی شامل ہو گی، کمیٹی میں سکیورٹی اداروں اور دفتر خارجہ کے حکام بھی شامل ہوں گے۔

شہزاداکبر نے کہا کہ تحقیقات ہوں گی کہ کون کون سی معلومات لیک ہوئی ہیں، جاسوسی کے معاملے کی تحقیقات میں 2 سے 3 ماہ لگ سکتے ہیں۔  بھارت نے سافٹ ویئر کا انتہائی غیر ذمہ دارانہ استعمال کیا، ٹیکنالوجی سے 10 ممالک کے وزرا اعظم کے فون کو ٹارگٹ کیا گیا۔ فرانس نے اس معاملے پر تحقیقات شروع کردی ہیں اب پاکستان جاسوسی معاملے پربھارت کے خلاف قانونی کارروائی کرے گا۔

شہزاداکبر نے کہا کہ پاکستان کے قانون کے مطابق نوازشریف مفرورمجرم ہیں،بھارت کیوں عمران خان کے فون کے پیچھے پڑا ہوا ہے، رپورٹ کے مطابق عمران خان کے فون پر حملہ کیا گیا۔