سیشن کورٹ کا احاطہ میدان جنگ بن گیا

سیشن کورٹ کا احاطہ میدان جنگ بن گیا

(جمال الدین) سیشن کورٹ کا احاطہ ایک بار پھر میدانِ جنگ بن گیا، سیشن کورٹ میں پسند کی شادی کرنے والے جوڑے کے رشتے دار آپس میں لڑ پڑے، ایک دوسرے پر لاتوں گھونسوں اور مکوں کی بارش کردی۔

 گوالمنڈی کی رہائشی مبین نے دس روز قبل عظیم نامی لڑکے سے پسند کی شادی کی، مبین کے والدین نے عظیم کیخلاف اغواء کا مقدمہ درج کروا دیا، ایڈیشنل سیشن جج رائے نواز مارتھ کی عدالت میں کیس کی سماعت ہوئی، جہاں دونوں پارٹیوں کے خواتین و حضرات پیش ہوئے، احاطہ عدالت میں لڑکی مبین کی والدہ  عظیم کے ساتھ آنیوالے رشتہ داروں سے لڑ پڑی۔

لڑائی کے دوران لڑکے عظیم کا والد غلام نبی سر پھٹنے سے بے ہوش ہو گیا، لڑکی کی والدہ فرزانہ اور شاہانہ نے غلام نبی پر تشدد کیا جبکہ عدالت میں آنیوالے وکلاء اور سائلین کی بھی بڑی تعداد لڑائی دیکھنے کیلئے جمع ہو گئی۔

ذرائع کے مطابق اسلام پورہ پولیس نے موقع پر پہنچ کر لڑائی کرنیوالی خواتین کو حراست میں لے لیا اور مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی ہے۔