ایل ڈبلیو ایم سی ٹرک ٹھیک کرائے ورنہ بند کرنےکاحکم دیں گے:عدالت

Lahore high court
کیپشن: Lahore high court
سورس: google
Stay tuned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

ملک اشرف : لاہور ہائیکورٹ میں سموگ کے تدارک سےمتعلق کیس کی سماعت ، جسٹس شاہد کریم  نےریمارکس دئیے کہ لاہور ہمارا گھر ہے جیسے آپ گھر کے لیے کام کرتے ہیں تمام ادارے ایسے ہی کام کریں۔ لاہور ویسٹ مینجمنٹ اپنے ٹرک ٹھیک کرائے ورنہ سارے ٹرک بند کرنے کا حکم دے دیں گے،مئیر لاہور  سےمزید اقدامات سے متعلق پلان طلب ۔

 لاہورہائیکورٹ کے جسٹس شاہد کریم نےہارون فاروق کی سموگ  اوربڑھتی  ماحولیاتی آلودگی سے  متعلق متفرق درخواست پرسماعت کی ، لارڈ مئیر کرنل ریٹائرڈ مبشر جاوید سمیت دیگر پیش ہوئے ، جسٹس شاہد کریم نے ریمارکس دیئے  پنجاب حکومت نے سموگ کے تدارک کے لیے اقدامات شروع کیے ہیں ۔ تعلیمی  اداروں سمیت دیگردفاتربندکرنےسے متعلق نوٹیفکیشن  جاری کر دیا  جوخوش آئند ہے ۔ جسٹس شاہد کریم نے مئیر لاہور سے مکالمہ کرتے ہوئےکہا کہ مئیر صاحب! لاہور میں سموگ کے حالات آپ کے سامنے ہیں لیکن اب کچھ بہتری آ رہی ہے،  پچھلے2 روزمیں لاہور پہلے سے پانچویں نمبر پر آ گیا ہے ۔ 45 فیصدآلودگی گاڑیوں کے دھوئیں سے پیدا ہو رہی ہے ۔ لاہور میں سڑکوں کی الائنمنٹ بہت بری ہے ۔

جسٹس شاہد کریم نے  ریمارکس دیئے کہ میئرصاحب!  آپ اب بحال ہوچکے ہیں اور اس شہر کے کسٹوڈین ہیں ، آپ اپنا فوکل پرسن مقرر کریں ،فوکل پرسن دوسرے محکموں اور سی ٹی او سے مل کر کام کرے ۔

لارڈ میئر  نے عدالت  کو آگاہ کیا کہ  حکومت نے مکمل اختیارات نہیں دئیے،میں 8 فیصد سے زائد بجٹ خرچ نہیں  کر سکتا، اچھرہ سمیت 39 روڈز آلودہ ہیں. ٹیپا والوں اور دیگرز کو حکم دیتا ہوں جو نہیں مانتے ۔ جسٹس شاہد کریم نے ریمارکس دیئے کہ اگر آپ کے پاس بجٹ نہیں ہےتوعدالت کو آگاہ کریں ،عدالت آپ کو سپورٹ دے گی ۔ مئیر لاہور بولے عدالتی حکم پر من و عن عمل کیا جائے گا ۔ جسٹس  شاہد کریم نے ریمارکس دئیے کہ لاہور ویسٹ مینجمنٹ  کے ٹرکوں سے اتنا دھواں نکلتا ہے کہ ٹرک ہی نظر نہیں آتا ۔ لاہور ویسٹ   مینجمنٹ  اپنے ٹرک ٹھیک کرائےورنہ سارے ٹرک بند کر دوں گا ۔ میئر لاہورایک پلان عدالت کو جمع کرائیں اور بتائیں کہ کیا کیا اقدامات مزید ہونے چاہییں؟

جسٹس شاہد کریم نےاحکامات دیئے کہ ریڑھی بانوں کو ایک مناسب جگہ دے دی جائے تاکہ سڑکوں کےاطراف تجاوزات نہ ہوں ،لاہور ہمارا گھر ہے جیسے آپ گھر کے لیے کام کرتے ہیں تمام ادارے ایسے ہی کام کریں۔ عدالت نے عدالتی احکامات پر عمل درآمد کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کیس کی  سماعت ملتوی کردی۔