دوبارہ شادی سے انکار پر بیوی نے سابق شوہر پر تیزاب پھینک دیا

دوبارہ شادی سے انکار پر بیوی نے سابق شوہر پر تیزاب پھینک دیا
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

ویب ڈیسک:   طلاق یافتہ خاتون نے سابق شوہر کے دوبارہ شادی سےانکار  کرنے پر شوہر پر تیزاب پھینک دیا اور شدید زخمی کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق محمد عثمان نامی شخص جمعرات کی شام سول اسپتال برنس وارڈ لایاگیا جس کا چہرہ ، ہاتھ اور جسم کے دیگر حصے تیزاب سے جھلسے ہوئے تھے۔محمدعثمان کے رشتے داروں کا کہنا تھا کہ جمعرات کی دوپہر تین بجے محمد عثمان کو نامعلوم افراد نے موبائل  پرکال کرکے کام کے سلسلے میں ناگن چورنگی کے قریب  فلیٹ میں بلایا جہاں اس کی سابقہ بیوی شبانہ بھی موجود تھی۔رشتے داروں کے مطابق شبانہ کو محمد عثمان 9ماہ قبل طلاق دے چکاتھا لیکن شبانہ دوبارہ شادی کرنے کا اصرارکررہی تھی،رشتے داروں کا کہنا ہے کہ  محمد عثمان نے انکار کیا جس پر شبانہ نے اس کے چہرے پر تیزاب پھینک دیا۔

تیزاب کے چھینٹوں سے شبانہ بھی معمولی زخمی ہوئی جبکہ محمدعثمان کافی مزاحمت کرنے کے بعد فلیٹ سے نکل کر رکشے میں اپنی نانی کے گھر پہنچا اور وہاں سے رشتے داروں نے محمد عثمان کو سول اسپتال منتقل کیا جہاں طبی امداد دی جارہی ہے۔رشتے داروں نے بتایا کہ شبانہ جمعرات کو واقعے کے فوری بعد نیوکراچی تھانے پہنچ گئی اور اس نے الٹا الزام اپنے سابق شوہر محمد عثمان پر لگا دیا کہ میرے سابق شوہر نے تیزاب ڈالنے کی کوشش کی۔ جبکہ ایس ایچ او  ندیم احمد نے بتایا کہ ابتدائی تفتیش کے دوران اور محمد عثمان کی حالت دیکھ کر یہ ظاہر ہوتا ہے کہ خاتون نے شوہر پرتیزاب پھینکا ہے اور پولیس کو بھی گمراہ کرنے کی کوشش کی لیکن ابھی  پولیس واقعے کی تفتیش کررہی ہے۔

ایس ایچ او  ندیم احمد کے مطابق محمد عثمان کی حالت ٹھیک نہ ہونے کی وجہ سے پولیس اسکا بیان نہیں لے سکی  اس کے بیان کے بعدقانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی ،پولیس نے خاتون کو شامل تفتیش کیاہوا ہے۔پولیس کا یہ بھی کہنا ہے کہ  مضروب عثمان نے شبانہ سے پسند کی شادی کی تھی  اورپہلے ایک ہی کسی دفتر میں کام کیا کرتے تھے۔