ہوائی فائرنگ کی ویڈیو وائرل کرنیوالے ملزمان گرفتار

ہوائی فائرنگ کی ویڈیو وائرل کرنیوالے ملزمان گرفتار

( وقاص احمد ) ہوائی فائرنگ، اسلحہ کی نمائش، پتنگ بازی قانوناً جرم ہے اس کے باوجود جس طرح مختلف تقاریب اور مقامات پر ان کی خلاف ورزی کی جاتی ہے، وہ محتاجِ بیان نہیں۔

گزشتہ کئی برسوں سے سکیورٹی خدشات کے پیش نظر اسلحہ کی نمائش یا اسے غیر قانونی طور پر رکھنے کی سخت پابندی ہے لیکن عموما رات کے وقت شہر کے مختلف علاقوں میں جاری شادی بیاہ کی تقریب میں ہونے والی ہوائی فائرنگ کی آوازیں سنی جاتی ہیں جس سے شہریوں میں خوف وہراس پیدا ہوجاتا ہے۔

ان عوامل کے نتیجے میں رونما ہونے والے حادثات کی خبریں نظر تو آتی ہیں لیکن ارباب اختیار خصوصا پولیس، ڈولفن فورس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔

آج کل کی نوجوان نسل میں ہوائی فائرنگ کرکے ویڈیو سوشل میڈیا پر اپلوڈ کرنا ٹرینڈ بن چکا ہے۔ اس کے باوجود اکثر پولیس اہلکار اس کا نوٹس نہیں لیتے یا اس وقت کارروائی کرتے ہیں جب فائرنگ سے قیمی جان کا ضیاع ہوجاتا ہے۔

اسلام پورہ کےعلاقے میں ہوائی فائرنگ کرکے ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل کرنے والے 3 ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا۔

پولیس کے مطابق سرِعام ہوائی فائرنگ کرکے خوف وہراس پھیلانے والے 3 ملزمان گرفتار کرلئے گئے ہیں۔ ملزمان میں یاسر، انیس اورعدیل شامل ہیں۔

ملزمان نے اسلام پورہ کے علاقے میں ہوائی فائرنگ کی تھی جس سے شدید خوف وہراس پھیل گیا تھا۔ پولیس نے گرفتار ملزمان کے قبضہ سے 3 ناجائز پسٹل، میگزینز اور گولیاں برآمد کرکے مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

شاہدرہ میں نامعلوم موٹر سائیکل سوار افراد کی فائرنگ سے ایک شخص جاں بحق ہوگیا، پولیس نے لاش مردہ خانے منتقل کر کے تحقیقات کا آغاز کر دیا۔ ایس ایچ او شاہدرہ مقصود گجر کے مطابق واقعہ بیگم کوٹ چوک میں پیش آیا جہاں قیصر نامی شخص کپڑے لینے درزی کی دکان پر آیا تھا۔

دکاندار کپڑے پیک کر رہا تھا کہ دو موٹرسائیکل سوار افراد نے قیصر پر فائرنگ کردی جس سے وہ موقع پر جاں بحق ہوگیا اور ملزم موقع سے فرار ہوگیا۔